Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / پٹھان کوٹ حملہ کیلئے ذمہ دار کون؟وزیراعظم سے کانگریس کا استفسار

پٹھان کوٹ حملہ کیلئے ذمہ دار کون؟وزیراعظم سے کانگریس کا استفسار

پاکستان کا نام لینے سے اب نریندر مودی کیوں شرمارہے ہیں؟ سکیوریٹی کوتاہی کرنے والوں سے استعفیٰ کا مطالبہ
نئی دہلی 6 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پٹھان کوٹ دہشت گرد حملہ پر حکومت کے مدافعتی موقف پر تنقیدوں میں شدت پیدا کرتے ہوئے کانگریس نے آج وزیراعظم نریندر مودی سے ’’سنگین سکیوریٹی کوتاہی‘‘ کی ذمہ داری تفویض کرنے کا مطالبہ کیا اور کہاکہ ان کی نشاندہی کی جانی ضروری ہے۔ سابق وزیرداخلہ سشیل کمار شنڈے نے آج آل انڈیا کانگریس کمیٹی اجلاس کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ حکومت کو یہ اندازہ ہونا چاہئے کہ کچھ نہ کچھ غلطی ضرور ہوئی ہے اور اِس غلطی کا ارتکاب کرنے والوں کو مستعفی بھی ہونا چاہئے۔ جب اُن سے بار بار یہ سوال کیا گیا کہ کیا کانگریس وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ یا وزیر دفاع منوہر پاریکر سے اِس معاملہ میں استعفیٰ کا مطالبہ کررہی ہے، تو انھوں نے یہ جواب دیا کہ ’’اُنھیں اپنی غلطی کا احساس ہونا چاہئے اور استعفیٰ بھی دینا ہوگا‘‘۔ شنڈے نے کہاکہ حکومت پوری طرح ناکام ہوگئی ہے۔ قوم کے تحفظ کا اُس کے پاس کوئی نظام نہیں ہے۔ اے آئی سی سی کمیونکیشن ڈپارٹمنٹ کے صدرنشین رندیپ سرجیوالا نے کہاکہ وزیراعظم کو چاہئے کہ ذمہ دار شخص یا اشخاص کی نشاندہی کریں اور وزیرداخلہ و دفاع کے خلاف کارروائی کریں۔ اُنھوں نے کہاکہ حکومت کے سربراہ کی حیثیت سے پہلی ذمہ داری وزیراعظم پر عائد ہوتی ہے، اس کے بعد وزیر دفاع اور وزیرداخلہ بھی ذمہ دار ہیں کیوں کہ وہی اس معاملہ سے نمٹتے ہیں۔

وزیراعظم کو فیصلہ کن انداز میں کارروائی کرنی چاہئے اور وہ صرف زبانی باتیں نہ کریں۔ پارٹی نے وزیراعظم اور بی جے پی حکومت سے بھی یہ وضاحت طلب کی کہ سنگین سکیوریٹی کوتاہی کے لئے کون ذمہ دار ہیں۔ جبکہ دہشت گرد پٹھان کوٹ فضائیہ کے اڈے میں گھس آئے حالانکہ پہلے ہی انٹلی جنس چوکسی اختیار کی جاچکی ہے۔ حکومت پر سکیوریٹی محاذ پر پوری طرح ناکام ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے کانگریس قائدین نے نریندر مودی کے لوک سبھا انتخابات سے قبل کی گئی تقاریر پر مبنی ویڈیو کلپس بھی دکھائے جس میں انھوں نے پاکستان سے نمٹنے کے معاملہ میں یو پی اے حکومت پر تنقید کی تھی اور سخت موقف اختیار کرنے کا وعدہ کیا تھا۔ اُنھوں نے جاننا چاہا کہ پٹھان کوٹ حملہ کے تعلق سے این ڈی اے حکومت پاکستان کے ساتھ نرم موقف کیوں اختیار کئے ہوئے ہے۔ اُنھوں نے استفسار کیاکہ مودی کی زیرقیادت بی جے پی حکومت پٹھان کوٹ حملہ آوروں کو ’’پاکستانی دہشت گرد‘‘ قرار دینے سے کیوں شرمارہی ہے۔ سرجیوالا اور شنڈے نے یہ بھی جاننا چاہا کہ مودی حکومت نے حکومت پاکستان سے رسمی احتجاج کیوں درج نہیں کرایا۔ پاکستانی ہائی کمشنر کو کیوں طلب نہیں کیا گیا۔ کانگریس نے حکومت کے سامنے ایک سوالنامہ رکھا جس میں یہ پوچھا گیا کہ وزیراعظم یا وزیرداخلہ یا وزیر دفاع نے پٹھان کوٹ آپریشن کا کنٹرول اپنے ہاتھ میں کیوں نہیں لیا؟ وزیراعظم نے کابینی کمیٹی برائے سلامتی کا اجلاس کیوں طلب نہیں کیا۔ اُنھوں نے مودی پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ وہ اکثر کہتے تھے کہ یو پی اے وزراء پاکستانی قائدین کی بریانی سے ضیافت کررہے ہیں لیکن اب یہ سب کیا ہورہا ہے؟

TOPPOPULARRECENT