Wednesday , November 22 2017
Home / ہندوستان / پٹھان کوٹ دہشت گردانہ حملہ کی تحقیقات

پٹھان کوٹ دہشت گردانہ حملہ کی تحقیقات

ایس پی سلویندر سنگھ سے این آئی اے کی پوچھ تاچھ
نئی دہلی ۔ 11 ۔ جنوری : ( سیاست ڈاٹ کام ) : پنجاب کے پولیس سپرنٹنڈنٹ ( ایس پی ) جنہیں پٹھان کوٹ میں حملہ سے قبل دہشت گردوں نے اغواء کرلیا تھا ۔ مذکورہ حملہ کے سلسلہ میں پوچھ تاچھ کے لیے آج نیشنل انوسٹیگیشن ایجنسی ( این آئی اے ) کے روبرو پیش ہوئے ۔ قبل ازیں این آئی اے نے سلویندر سنگھ کو سمن جاری کیا تھا جو کہ فی الحال پنجاب مسلح پولیس کے 75 ویں بٹالین کے اسسٹنٹ کمانڈنٹ ہیں چونکہ انہوں نے این آئی اے اور پنجاب پولیس کو اپنے اغواء اور رہائی کے بارے میں متضاد بیانات دئیے ہیں ۔ جس کے باعث مرکزی ادارہ نے ان سے مزید پوچھ تاچھ کی ہے ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ سلویندر سنگھ کا لائی ڈیٹکٹر ٹسٹ کروایا جائے گا ۔ تاکہ جھوٹ بیانی سے کام لینے کی کوششوں کو ناکام بنایا جاسکے ۔ واضح رہے کہ سلویندر سنگھ اور ان کے جویلری دوست راجیش ورما اور باورچی مدن گوپال کو دہشت گردوں نے 31 دسمبر کی شب اغواء کرلیا تھا اور پٹھان کوٹ فضائیہ اڈہ تک پہنچنے کے لیے ان کی کار کا استعمال کیا تھا جہاں پر پاکستانی دہشت گردوں کے حملہ میں 7 سیکوریٹی فورسیس کے اہلکار بشمول این ایس جی کا لفٹننٹ کرنل ہلاک ہوگئے تھے ۔ سلویندر سنگھ کا حال ہی میں ڈسپلن شکنی کے الزام میں ایس پی ( ہیڈکوارٹر ) گردسپوار کی حیثیت سے تبادلہ کردیا گیا ۔ این آئی اے نے پٹھان کوٹ میں انڈین ایر فورس کے اڈہ ( بیس ) پر دہشت گردانہ حملہ کے سلسلہ میں 3 کیسیس درج کئے ہیں۔ جس میں پہلا کیس سلویندر سنگھ کا اغواء ، دوسرا کیس ٹیکسی ڈرائیور کا قتل اور تیسرا کیس فضائیہ کے اڈہ پر دہشت گردانہ حملہ شامل ہے ۔

TOPPOPULARRECENT