Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / پڑوسی خیر خواہی اور نیکی کا زیادہ حقدار ، ہر مسلمان پر خیر خواہی کرنا لازم

پڑوسی خیر خواہی اور نیکی کا زیادہ حقدار ، ہر مسلمان پر خیر خواہی کرنا لازم

ایم جی اے کے تعارف اسلام کلاس سے محترمہ زارا خاں کا خطاب
حیدرآباد ۔ 6۔ مئی : ( راست ) : پڑوسیوں کے معاملے میں موجودہ سماج بڑا ہی حق تلفی کا عادی ہوچکا ہے ۔ پڑوسیوں کی تکلیف پر خوش ہونا ، ضروریات زندگی کی شدید کمی پر بھی کوئی خیال نہ کرنا ، اپنے پڑوسی جو پانی ، یا بجلی سے محروم ہوں یا پھر بے روزگار ہوں اور ان کے بچے فاقہ سے تڑپ رہے ہوں ، پیسہ کی کمی کی وجہ سے تعلیم سے محروم ہورہے ہوں تو ان سے بے توجہی برتنا معمول بن گیا ہے ۔ جب کہ اسلام والدین اور رشتہ داروں کے بعد سب سے زیادہ پڑوسیوں کے حقوق ادا کرنے اور ان کے ساتھ حسن سلوک کرنے کی تاکید کرتا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار محترمہ زارا خاں نے مسلم گرلز اسوسی ایشن کی جانب سے چلکل گوڑہ ، میں جاری تعارف اسلام کلاس میں طالبات و خواتین کو مخاطب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پڑوسیوں کے حقوق کی ادائیگی ہر مسلمان پر لازم ہے ۔ کوئی پڑوسی اپنے پڑوسی کے ساتھ بدگوئی و بدکلامی نہ کرے اور نہ کسی طرح کی اسے تکلیف اور ایذا پہنچائے ۔ نبی کریم ﷺ نے پڑوسیوں کے متعلق فرمایا : ’ جو شخص اللہ اور آخرت کے دن پر ایمان رکھتا ہو ، وہ اپنے پڑوسی کے ساتھ اچھا سلوک کرے ‘ ۔ ایک اور جگہ آپ ﷺ نے فرمایا ’ وہ شخص مومن نہیں جو خود تو آسودہ ہو کر کھائے مگر اس کا پڑوسی بھوکا رہے ‘ ۔ حضرت ابوذر غفاریؒ کو نصیحت کرتے ہوئے نبی پاک ﷺ نے فرمایا : ’ جب تم سالن پکاؤ تو اس میں ذرا پانی ملالو اور اس سے اپنے پڑوسی کی خر گیری کرو ‘ ۔ ایک اور حدیث کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’ قیامت کے دن ایک شخص اپنے پڑوسی کا دامن پکڑے ہوئے اللہ سے فریاد کرے گا کہ اے اللہ ! اس نے میرے ساتھ خیانت کی ، پڑوسی کہے گا کہ تیری عزت کی قسم میں نے اس کے مال اور اہل و عیال کے ساتھ کوئی خیانت نہیں کی ۔ پہلا پڑوسی کہے گا یہ تو ٹھیک کہتا ہے مگر اس نے مجھے گناہ کرتے ہوئے دیکھا مگر مجھے روکا نہیں ‘ ۔ لہذا پڑوسیوں کے حقوق ادا کرنے اور ان سے اچھا سلوک کرنے کی اسلام نے جو ہدایت کی ہے اگر ہم مسلمان اس پر عمل کریں تو ہمارا معاشرہ امن و سکون کا گہوارہ بن جائے گا ۔ اور ہماری سماجی پریشانیاں دور ہوجائیں گی ۔ اس کے علاوہ دونوں شہروں کے مختلف مقامات کے سنٹرس میں محترمہ روحی خاں ، محترمہ عابدہ بیگم ، ڈاکٹر ذکیہ سلطانہ ، محترمہ شمیم فاطمہ ، محترمہ عفرا فاطمہ ، محترمہ جمیلہ بیگم ، محترمہ فرحانہ بیگم ، محترمہ سمیرا بیگم ، محترمہ ماریہ شریف ، محترمہ ماریہ احمدی ، محترمہ سمیہ بیگم ، محترمہ تنویر فاطمہ ، محترمہ بشری ندیم ، محترمہ تسنیم فاطمہ ، محترمہ کبریٰ بانو اور دیگر کارکنات نے مخاطب کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT