Tuesday , July 17 2018
Home / Top Stories / پکوان میں مہارت سے شخصیت میں نکھار اور خاندان کا دل جیتنا ممکن

پکوان میں مہارت سے شخصیت میں نکھار اور خاندان کا دل جیتنا ممکن

سیاست و فریڈم ریفائنڈ برانڈ آئیل کی جانب سے کوکری کلاسیس، ماسٹر شیف پونیٹ مہتا کا خطاب، خواتین میں زبردست جوش و خروش

حیدرآباد۔/11 جولائی، ( سیاست نیوز) ماہر پکوان ماسٹر شیف پونیٹ مہتا نے آج کہا کہ لڑکیوں و خواتین میں پکوان کے متعلق جو شعور بیدار ہوا ہے اس کو نظرانداز نہیں کیا جاسکتا، ان صلاحیتوں کو پروان چڑھانے کے لئے سیاست اور فریڈم رائیس برانڈ آئیل کی طرح کے دیگر ادارے کو منظر پر آنے کی ضرورت ہے۔ پکوان میں ماہر لڑکیاں شوہر اور خاندان کے دل کو جیتنے والی ہوتی ہیں۔ ماسٹر شیف پونیٹ مہتا سیاست اور فریڈم رائیس برانڈ آئیل کے تعاون و اشتراک سے منعقد ہوئی تیسری کوکری کلاس سے مخاطب تھے۔ انہوں نے ایس اے ایمپرئیل گارڈن ٹولی چوکی میں اپنے عملے کے ساتھ پکوان کے مختلف طریقے بتاتے ہوئے کہا کہ لڑکیاں تعلیم یافتہ ہوں یا گھریلو وہ ضرور پکوان کی طرف اپنی توجہ کو مبذول کریں اس سے یہ ہوگا کہ وہ اپنی شخصیت کو منواسکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مرد و خواتین اور نوجوان سُوپ کے مزہ کو دوبالا کرنے کیلئے نت نئے اشیاء ڈالتے ہیں اگر اس میں پکا ہوا قیمہ اور مٹر ڈالیں تو اس کا مزہ لذیز ہوگا اور جو والدین صبح کے اوقات بچوں کو سُوپ پلاتے ہیں وہ صحت کے لئے مقوی ہوگا۔ ماسٹر شیف پونیٹ مہتا نے آج کی اس پکوان کلاس میں مختلف انواع و اقسام کے ڈشس کی تیاری اور اس میں کن کن مصالحہ جات کا استعمال کیا جاتا ہے تفصیل سے بتایا۔ اس کلاس میں خواتین و لڑکیوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ پکوان کے دوران ماسٹر شیف کے بتائے ہوئے مختلف طریقوں کو آسانی کے ساتھ دیکھنے کیلئے شادی خانہ میں جدید ٹیکنک LED کا استعمال کیا گیا۔ آج کے اس کلاس میں ماسٹر شیف نے مغلپورہ کی سلمیٰ نوشین کو چاول سے پکوڑا بنانے کی ڈش میں تعاون کیلئے بلوایا اور سلمیٰ نوشین نے بڑی دلچسپی کے ساتھ اس ڈش میں تعاون کیا اور شیف کو بتایا کہ اگر ان پکوڑوں کو خالص تیل سے تل لیا جائے تو اُس کا مزہ کچھ اور ہی ہوتا ہے۔

اس پر سلمیٰ نوشین کو فریڈم کی جانب سے ماسٹر شیف کے ہاتھوں آئیل کی بوتل تحفہ میں دی گئی۔ کلاس کے آخر میں معصوم لڑکی ہاجرہ یسین کے ہاتھوں لکی ڈرا کروایا گیا جیسا کہ اعلان کیا گیا تھا کہ اس لکی ڈرا میں خوشنما پروین، رخسانہ بیگم، حمید صدیقی کے نام ڈرا میں نکلے جنہیں مسٹر اٹل وجے سیل منیجر کے ہاتھوں تیل کے بوتل تحفہ میں دیئے گئے۔ اس موقع پرشہر کے مزاح نگاروں کی جانب سے لطائف سنانے کا اہتمام کیا گیا تھا اور اہانہ شیخ اور سارہ خان نے عمدہ اینکرنگ کی۔ اس موقع پر پکوان کی تیاری کے دوران ڈش کا نام اور ترکیب کے متعلق سوالات کا صحیح جواب دینے پر شیف پونیٹ مہتا کی جانب سے ریفائینڈ فلاور آئیل کا ایک لیٹر کا تیل بطور انعام حمیرہ فاطمہ اور دیگر نے انعام حاصل کیا۔ اس کلاس میں فریڈم رائیس برانڈ آئیل کی جانب سے فیس بک کے ذریعہ سوالات پونیٹ مہتا نے تیز جواب دینے پر فریڈم آئیل کی جانب سے انہیں بھی کیان تحفہ میں دیا گیا۔ اس طرح بچے ہوئے چاول سے ڈش کے بنانے اور تیاری کے متعلق سلمیٰ نوشین اور عرشیہ کو بھی آئیل کیان تحفہ میں دیا گیا اور اسی کے ساتھ بہت ساری خواتین نے مختلف سوالات کئے جن میں منہاج شمیم، لطیف النسائ، صوفیہ، معمر خاتون سلیم النساء بیگم اور دیگر خواتین و لڑکیاں ہیں۔ اس طرح آج کی اس کلاس میں چکن سُوپ، کاجو اپیس، چاول کے پکوڑے، سیسڈالا جوپیزا قسم کی ڈش ہے، ٹورٹا، دوسہ (uttapa)، پنجابی راجم اور زیرہ رائس کی تیاری بتائی گئی۔ اسی طرح اگر کسی کے گھر میں سالن بچ جائے تو اسے یوں ہی ضائع نہ کریں بلکہ اسے بھی استعمال میں لاکر ایک نئی ڈش تیار کی جاسکتی ہے۔ اس موقع پر ان کا ساتھ دینے والوں میں شیف سید عروج، شیف اسد، شیف عبدالغفار، شیف سید بلالہ اور دیگر ہیں۔ ماسٹر شیف پونیٹ مہتا سے خواتین و لڑکیوں نے آخر میں مزید معلومات حاصل کرتے ہوئے تبادلہ خیال کیا اور آٹو گراف بھی لئے۔

TOPPOPULARRECENT