پھلیوں اور مٹر کے استعمال سے بُرے کولیسٹرول میں کمی

روزانہ ایک بار پھلیاں ، بٹانے ، سبز مٹر ، یا بوٹ ( سبز چنے ) کھانے سے برے کولیسٹرول میں کمی کرتا ہے جس کے نتیجہ میں قلب سے مربوط شریانوں کے امراض میں بھی کمی آتی ہے ۔ ایک نئی تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ سینٹ مائیکلس ہاسپٹل کینیڈا نے کہا کہ روزانہ ایک رکابی بھر دالیں کھانے سے لوگوں کے ایل ڈی ایل ( برے ) کولیسٹرول میں 5 فیصد کمی ہوتی ہے ۔

روزانہ ایک بار پھلیاں ، بٹانے ، سبز مٹر ، یا بوٹ ( سبز چنے ) کھانے سے برے کولیسٹرول میں کمی کرتا ہے جس کے نتیجہ میں قلب سے مربوط شریانوں کے امراض میں بھی کمی آتی ہے ۔ ایک نئی تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ سینٹ مائیکلس ہاسپٹل کینیڈا نے کہا کہ روزانہ ایک رکابی بھر دالیں کھانے سے لوگوں کے ایل ڈی ایل ( برے ) کولیسٹرول میں 5 فیصد کمی ہوتی ہے ۔

ہاسپٹل کے طبی تغذیہ اور خطرہ کے عنصر میں ترمیم کے مرکز کے ڈاکٹر جان سیون پائپر نے کہاکہ قلب سے مربوط شریانوں کے مرض کے خطرہ میں پانچ تا چھ فیصد کمی آئی ہے ۔ یہ امریکہ میں موت کی ایک بڑی وجہ ہے ۔ دالوں میں کمتر گلائی سیمک اشاریہ یعنی یہ ایسی غذائیں ہیں کہ سست رفتار سے ناکام ہوجاتی ہیں۔ ان کا رجحان کم کرنا یا مویشیوں کے پروٹین کی جگہ لینا اور اس کے ساتھ ساتھ بری چکنائیوں میں جیسے کہ ایک رکابی کھانے میں شامل چکنائیاں ہوتی ہیں ، کمی کرنا ہے ۔

سیون پائپر نے کہا کہ ہماری غذاؤں میں ہمارے دالوں کے استعمال میں اضافہ کی کافی گنجائش ہوتی ہے تاکہ قلب سے مربوط شریانوں کو بھی فائدہ پہنچایا جاسکے ۔ اس تحقیق میں من مانے انتخاب کرکے محدود پیمانہ پر 1037 افراد کے جائزے کو شامل کیا گیا ۔ مردوں میں عورتوں کی بنسبت ایل ڈی ایل کولیسٹرول کم کرنے کی زیادہ صلاحیت ہوتی ہے کیونکہ غالباً عورتوں کی غذائیں معیار کے اعتبار سے کم تر اور کولیسٹرول کی سطحوں کے اعتبار سے بلند تر ہوتی ہیں۔ صحت بخش غذاؤں سے حاصل ہونے والے فائدے نمایاں ہوتے ہیں۔ تحقیق میں شامل چند افراد نے بدہضمی کی اطلاع دی جیسے کہ پیٹ پھول جانا ، گیس ، پیچش یا قبض لیکن تحقیق کے دوران یہ علامات دب گئیں یہ تحقیق کینیڈا کی طبی انجمن کے رسالہ میں شائع ہوئی ۔

TOPPOPULARRECENT