Thursday , May 24 2018
Home / Top Stories / پہلے سرینگر کے لال چوک پرترنگا لہرائیں، فاروق عبداللہ کا چیلنج

پہلے سرینگر کے لال چوک پرترنگا لہرائیں، فاروق عبداللہ کا چیلنج

جموں و کشمیر ۔27 نومبر ۔( سیاست ڈاٹ کام) جموں و کشمیر کے سابق چیف منسٹر فاروق عبداﷲ نے ایک اور متنازعہ بیان دیتے ہوئے مرکز کو چیلنج کیا کہ وہ پاکستانی مقبوضہ کشمیر میں قومی پرچم لہرانے کی بات کرنے سے قبل سرینگر کے لال چوک میں پرچم لہراکر دکھائے ۔ ڈاکٹر عبداﷲ کے اس ریمارکس کی بی جے پی نے مذمت کی ۔ ریاستی ڈپٹی چیف منسٹر نرمل سنگھ نے کہاکہ نیشنل کانگریس ، علحدگی پسندوں اور عسکریت پسندوں کو مستحکم کررہی ہے ۔ انھوں نے کہاکہ بشمول سرینگر ، ریاست کے تمام مقامات پر قومی پرچم لہرایا جاتا ہے۔ فاروق عبداﷲ نے حال ہی میں دعویٰ کیا تھاکہ پاکستانی مقبوضہ کشمیر ہندوستان کا حصہ نہیں ہوسکتا ۔ انھوں نے کہاکہ وہ صرف حقائق بیان کررے ہیں اور پاکستانی مقبوضہ کشمیر کے بارے میں جو کچھ کہا تھا وہ بالکل سچ ہے ۔ ڈاکٹر عبداﷲ نے اپنے تبصروں کا پرزور دفاع کرتے ہوئے کہا کہ ’’(مرکز ؍ بی جے پی ) پاکستانی مقبوضہ کشمیر میں پرچم لہرانے کی بات کررہے ہیں۔ میں ان سے کہتا ہوں کہ پہلے وہ سری نگر جائیں اور وہاں قومی ترنگا لہرائیں۔ وہ یہاں بھی یہ نہیں کرسکتے اور پاکستانی مقبوضہ کشمیر کے بارے میںبات کرتے ہیں‘‘ ۔ نیشنل کانگریس کے سربراہ نے کہاکہ ’’اگر آپ سچ سُننا نہیں چاہتے تو جھوٹ میں ہی رہئے ۔ سچ یہ ہے کہ وہ ( پاکستانی مقبوضہ کشمیر) ہمارا نہیں ہے اور یہ ( جموںو کشمیر) ان ( پاکستان) کا حصہ نہیں ہے ۔ یہی سچائی ہے ‘‘ ۔ فاروق عبداﷲ آج یہاں کانگریس کے لیڈر اور سابق رکن پارلیمنٹ کو ان کی 30ویں برسی کے موقع پر خراج عقیدت ادا کرنے کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کررہے تھے ۔ اس سوال پر کہ اس قسم کے بیانات سے آیا آپ ہندوستان کے جذبات کو مجروح نہیں کررہے ہیں ؟ ڈاکٹر فاروق عبداﷲ نے برہمی کے ساتھ جھنجھلاتے ہوئے صحیفہ نگاروں سے سوال کیا کہ ’’یہ ہندوستانی جذبات کیا ہیں؟ کیا آپ سمجھتے ہیں میں ہندوستانی نہیں ہوں ؟ ‘‘ ۔

TOPPOPULARRECENT