Tuesday , September 18 2018
Home / سیاسیات / پیاز ، مودی حکومت کو رُلا دے گی

پیاز ، مودی حکومت کو رُلا دے گی

نئی دہلی۔19 جون (سیاست ڈاٹ کام) پیاز کی قیمت میں تیزی سے اضافہ مودی حکومت کو ُرلا دے گا ۔ 90ء کے دہے میں اسی پیاز نے اٹل بہاری واجپائی حکومت کو گرا دیا تھا۔ ملک بھر میں پیاز کی قیمت اکتوبر تک 100 روپئے فی کیلو گرام ہونے کا اندیشہ ہے۔ آلو کی قیمت بھی عام خریداروں کی دسترس سے باہر ہوتی جارہی ہے۔ مودی حکومت نے برآمدات پر پابندی عائد کرنے کیلئ

نئی دہلی۔19 جون (سیاست ڈاٹ کام) پیاز کی قیمت میں تیزی سے اضافہ مودی حکومت کو ُرلا دے گا ۔ 90ء کے دہے میں اسی پیاز نے اٹل بہاری واجپائی حکومت کو گرا دیا تھا۔ ملک بھر میں پیاز کی قیمت اکتوبر تک 100 روپئے فی کیلو گرام ہونے کا اندیشہ ہے۔ آلو کی قیمت بھی عام خریداروں کی دسترس سے باہر ہوتی جارہی ہے۔ مودی حکومت نے برآمدات پر پابندی عائد کرنے کیلئے اقدامات کئے ہیں، اس کے باوجود پیاز کی قیمت پر قابو نہیں پایا جاسکا۔ ژالہ باری ، غیرموسمی بارش کے باعث پیاز کی فصل تباہ ہوئی ہے۔

مانسون کی تاخیر سے آمد بھی پیاز کی قلت کا باعث بنی ہے۔ مہنگائی پر قابو پانے مودی حکومت کا دعویٰ دَم توڑ رہا ہے۔ عام مارکٹ میں پیاز کی موجودہ قیمت 30 تا 50 روپئے کیلو فی گرام ہے۔ مہاراشٹرا اور مدھیہ پردیش میں پیاز کی ربیع فصل غیرموسمی حالات کے باعث تباہ ہوئی ہے۔ تاجرین کا کہنا ہے کہ پیاز کے نقصانات کا کوئی تخمینہ نہیں لگایا جاسکتا۔ پیاز کے تخم کی قیمت میں بھی گزشتہ سال کے مقابل 400% اضافہ ہوا ہے۔ اس کی وجہ سے پیاز کی کاشت کا رقبہ بھی گھٹ جائے گا۔ پیاز کی طرح آلو کی پیداوار پر بھی موسمی اثرات مرتب ہورہے ہیں۔ آلو کی برآمدات میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ پاکستان پیاز کا سب سے بڑا خریدار ہے۔ خریف کی فصل میں تاخیر ہوتی ہے تو ہمیشہ پیاز کی قیمت میں اضافہ ہوتا ہے۔

پیاز کی بروقت درآمد مودی حکومت کیلئے آزمائش
پونے۔ 19 جون (سیاست ڈاٹ کام) نریندر مودی حکومت نے پیاز کی قیمت پر قابو پانے کیلئے بروقت اس کی درآمد کو یقینی نہیں بنایا تو صورتِ حال مزید ابتر ہوجائے گی۔ پیاز اور آلو کے تاجرین نے بتایا کہ تخم کی شدید قلت اور قیمتوں میں دوگنا اور سہ گنا اضافہ سے پیداوار متاثر ہورہی ہے۔ آلو کے ذخیرہ کیلئے بھی کوئی سرکاری انتظامات نہیں کئے گئے۔ فروری میں ہونے والی غیرموسمی بارش نے آلو کی پیداوار کو نقصان پہنچایا ہے۔

TOPPOPULARRECENT