Tuesday , October 23 2018
Home / Top Stories / پیسہ اور دباؤ کی طاقت ہمیشہ کارگر نہیں ہوتی، بی جے پی کو سبق ملا ہوگا : اپوزیشن

پیسہ اور دباؤ کی طاقت ہمیشہ کارگر نہیں ہوتی، بی جے پی کو سبق ملا ہوگا : اپوزیشن

٭ مرکزی حکومت اخلاقی بنیادوں پر مستعفی ہوجائے، اکھلیش کا مطالبہ
٭ گورنر کرناٹک وجو بھائی والا کو استعفا دینا چاہئے : شرد پوار

نئی دہلی ، 19 مئی (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس اور کئی دیگر اپوزیشن پارٹیوں نے آج بی جے پی پر شدید تنقید میں دعویٰ کیا کہ کرناٹک میں پیسہ اور دباؤ کی طاقت کو استعمال کرنے کی تمام کوششیں ناکام ہوگئیں اور زعفرانی پارٹی سے کہا کہ اس واقعہ سے سبق سیکھے۔ جیسے ہی بی ایس یدی یورپا نے چیف منسٹر کی حیثیت سے استعفا دیا، صدر کانگریس راہول گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی پر تیکھا حملہ چھیڑتے ہوئے الزام عائد کیا کہ ’’وہ (خود) کرپشن ہیں‘‘ اور اس سے لڑائی کے ان کے دعوے ’’صریح جھوٹ‘‘ ہیں۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ اپوزیشن پارٹیاں اب متحد ہوں گی تاکہ 2019ء لوک سبھا چناؤ میں بی جے پی۔ آر ایس ایس کو شکست دی جاسکے۔ منی پور میں جہاں اسمبلی الیکشن میں بی جے پی نے کانگریس بڑی پارٹی بننے کے باوجود کسی طرح اقتدار پر قبضہ جمایا، وہاں پردیش کانگریس کمیٹی کے سربراہ ٹی این ہاوکیپ نے کہا کہ کرناٹک کا واقعہ مودی حکومت کے اختتام کی شروعات ہے۔ چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی، بی ایس پی کی سربراہ مایاوتی، صدر ایس پی اکھلیش یادو، آر جے ڈی لیڈر تیجسوی یادو اور بائیں بازو قائدین نے آج کرناٹک کے واقعات کو جمہوریت اور سچائی کی فتح قرار دیا ہے۔ این سی پی سربراہ شرد پوار نے کہا کہ گورنر کرناٹک وجو بھائی والا کو یدی یورپا کے اسمبلی میں خط اعتماد کا سامنا کئے بغیر استعفے کے تناظر میں مستعفی ہوجانا چاہئے۔ اکھلیش نے کہا کہ کرناٹک میں ’’عوام کے خط اعتماد کی فتح‘‘ ہوئی اور مرکزی حکومت سے اخلاقی بنیادوں پر مستعفی ہوجانے کا مطالبہ کیا ہے۔ مایاوتی نے کہا کہ پیسے کی طاقت اور سرکاری مشینری کے بل بوتے پر ہمیشہ کامیابی نہیں مل جاتی ۔ تیجسوی نے کہا کہ کرناٹک کے معاملے سے واضح ہوگیا کہ سچائی کی ہمیشہ فتح ہوتی ہے۔ دریں اثناء ممبئی کانگریس کے سربراہ سنجے نروپم کے ایک ٹوئٹ سے تنازعہ چھڑگیا، کیونکہ انھوں نے گورنر وجو بھائی والا کا اپنے آقا سے وفاداری کے معاملے میں ’کتے‘ سے تقابل کیا۔ تاہم انھوں نے تنقیدوں پر ٹوئٹ حذف کردیا۔

TOPPOPULARRECENT