Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / پینے کے پانی کیلئے ندیوں کا استعمال کرنے چیف منسٹر کے سی آر کا مشورہ

پینے کے پانی کیلئے ندیوں کا استعمال کرنے چیف منسٹر کے سی آر کا مشورہ

پراجکٹوں کو دریاؤں سے پانی کی سربراہی ‘ مشن بھاگیرتا جائزہ اجلاس سے خطاب‘وقارآباد میںجڑی بوٹیوںکی شجرکاری کی ہدایت
حیدرآباد ۔ 11ستمبر ( سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگاہ کے چندر شیکھر راؤ نے ندیوں کے پانی کے استعمال سے پینے کے پانی کی سربراہی کو یقینی بنانے کیلئے خصوصی اقدامات کرنے کی عہدیداروں کو ہدایت دی ۔چیف منسٹر تلنگانہ نے آج پرگتی بھون میں مشن بھاگیرتا کا عہدیداروں کا ساتھ اجلاس طلب کیا ۔ اس موقع پر حکومت کے مشیر اعلیٰ راجیو شرما ‘ چیف سکریٹری ایس پی سنگھ ‘ پرنسپال سکریٹری ایس کے جوشی ‘ آئی این سی ناگیندر ‘ اوایس ڈی سریدھر دیشپانڈے اور دوسرے عہدیدار موجود تھے ۔ کے سی آر نے عہدیداروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ریاست کے ہر گھر کو نلوں کے ذریعہ پینے کا پانی سربراہ کرنے کیلئے مشن بھاگیرتا اسکیم کا آغاز کیا گیا ہے ۔ پینے کے پانی کی سربراہی کا آغاز ہونے کے بعد ایک روز بھی بغیر سربراہ کئے نہیں رہا جاسکتا ہے ۔ لہذا دریاؤںکے پانی کو ہمیشہ دستیاب رکھنے کیلئے پراجکٹس میں ڈرا ڈون لیول ( ایم ڈی ڈی ایل) کو برقرار رکھنے کی ہدایت دی ۔ صرف پراجکٹس میں پانی رہنا کافی نہیں ہے ‘ ضرورت پڑنے پر اس کے استعمال کیلئے بھی پانی کی سطح کوبرقرار رکھا جائے ۔ کالیشورم کے بشمول دوسرے پراجکٹس کی تکمیل سے بہت زیادہ پانی دستیاب رہے گا ۔ پانی کیلئے فی الحال ایس آر ایس پی ‘ ناگرجنا ساگر سے تلنگانہ کیلئے ثمرآور ثابت ہورہے ہیں ۔ وقارآباد کے جنگلات میں جڑی بوٹیوں کی شجرکاری کا بھی چیف منسٹر نے جائزہ لیا ۔ تیسرے مرحلے کے ہریتا ہارم کا چیف منسٹر آفس عہدیداروں کے ساتھ کے سی آر نے جائزہ لیا اور عہدیداروں کو بتایا کہ حضور نظام کے دور میں وقارآباد کے علاقہ میں طبی پودے اور جڑی بوٹیوں پر مشتمل جنگلات ہوا کرتے تھے جس کی وجہ سے وہاں ٹی بی ہاسپٹل بھی قائم کیا گیا تھا ۔ وقارآباد کے قدرتی ماحول سے بھرپور استفادہ کرنے کی عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ عہدیداروں نے چیف منسٹر کو بتایا کہ تیسرے مرحلے کے ہریتا ہارم پروگرام میں 40کروڑ کے منجملہ 29کروڑ پودے لگا دیئے گئے ہیں ۔

 

TOPPOPULARRECENT