Saturday , January 19 2019

پینے کے پانی کی کم مقدار میں سربراہی

حیدرآباد 13 مارچ (سیاست نیوز) ابھی تو گرمی کی شروعات ہے لیکن واٹر بورڈ نے پینے کے پانی کی سربراہی کم کردی ہے اور دونوں شہر حیدرآباد و سکندرآباد کے کئی علاقوں سے شکایات آرہی ہیں کہ پینے کے پانی کی سربراہی معمول سے کم کردی گئی ہے اور پریشر بھی کم ہوگیا ہے۔ بعض مقامات پر تو گزشتہ چند ہفتوں سے پانی کی سربراہی بالکل بند ہے۔ جہاں پانی ایک دن وقفہ سے سپلائی ہوا کرتا تھا وہاں اب تین چار دن کے وقفہ سے پانی سربراہ کیا جارہا ہے۔ جہاں ایک دن وقفہ سے پانی کی سربراہی برقرار ہے وہاں مقدار میں کمی کی شکایت ہے۔ بعض مقامات پر مرمتی کاموں کی وجہ سے پانی کی سربراہی میں رکاوٹ ہوئی ہے۔ عوام کے لئے مصیبت اس وجہ سے بھی بڑھ گئی ہے کہ بیشتر مقامات پر بورویلس خشک اور ناکارہ ہوگئے ہیں۔ کافی کھدائی کے باوجود پانی دستیاب نہیں ہے۔ ایک ہزار فٹ کی کھدائی پر بھی پانی نہیں مل رہا ہے۔ پینے کے پانی کی ناکافی سربراہی کی وجہ سے منرل واٹر پلانٹس کی قسمت جاگی ہے اور صورتحال کا استحصال کیا جارہا ہے۔ اس دوران واٹر بورڈ کے عہدیدار نے گھروں کو پینے کا پانی کم مقدار میں سربراہ کرنے کے الزام کی تردید کی ہے اور کہاکہ بورویلس کی غیر مجاز کھدائی کا اس سے تعلق نہیں ہے اس سے نمٹنا ضلع نظم و نسق کا کام ہے۔

TOPPOPULARRECENT