Monday , December 11 2017
Home / Top Stories / پیپر ٹرائیل مشین کی خریدی کیلئے وقت کم

پیپر ٹرائیل مشین کی خریدی کیلئے وقت کم

مرکز سے فوری فنڈس جاری کرنے کی اپیل : نسیم زیدی
نئی دہلی ۔ /16 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) چیف الیکشن کمشنر نسیم زیدی نے بدلتے حالات کا حوالہ دیتے ہوئے مرکز پر زور دیا ہے کہ فنڈس کی اجرائی میں تیزی لائی جائے تاکہ پیپر ٹرائیل مشین بروقت خریدے جاسکیں اور 2019 ء لوک سبھا انتخابات میں ان سے استفادہ کیا جاسکتا ہے ۔ وزیر قانون روی شنکر پرساد کو ایک مکتوب میں انہوں نے بتایا کہ سپریم کورٹ نے بھی تحقیر عدالت کی درخواست کی سماعت کرتے ہوئے انتخابی پینل کو ہدایت دی ہے کہ رائے دہی کی تنقیح کے لئے پیپر آڈٹ ٹرائیل  (VVPAT) متعارف کرانے کیلئے درکار وقت کا تعین کیا جائے ۔ چیف الیکشن کمشنر نے ’بدلتے حالات‘ کی وضاحت نہیں کی لیکن ان کا اشارہ اپوزیشن جماعتوں کی طرف تھا جس نے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کی کارکردگی کے بارے میں سوالات اٹھائے اور زیادہ سے زیادہ VVPAT نصب کرنے کا مطالبہ کیا جارہا ہے جس کے ذریعہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے ذریعہ رائے دہی کے شبہات ختم ہوسکتے ہیں ۔ بہوجن سماج پارٹی ، عام آدمی پارٹی اور کانگریس نے الیکشن کمیشن پر الیکٹرانک ووٹنگ مشین میں چھیڑچھاڑ کا الزام عائد کیا ۔ 16 سیاسی جماعتوں نے الیکشن کمیشن سے نمائندگی کرتے ہوئے پیپر بیالٹ سسٹم شروع کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ VVPAT ایک مشین ہے جو کسی شخص کے ووٹ ڈالنے کے بعد اس پارٹی کے انتخابی نشان کے ساتھ ایک چٹھی جاری کرتا ہے ۔ یہ چٹھی باکس میں ڈال دی جائے گی اور رائے دہندہ اپنے ساتھ نہیں لے جاسکتا ۔ الیکشن کمیشن کو 2019 ء لوک سبھا انتخابات میں ملک بھر کے لئے 16 لاکھ مشینوں کی ضرورت ہوگی اور اس کے لئے 3174 کروڑ روپئے درکار ہوں گے ۔

TOPPOPULARRECENT