Sunday , November 19 2017
Home / پاکستان / پیچیدہ اور گمراہ کن پالیسیوں سے جنوبی ایشیا میں امن کو خطرہ : پاکستان

پیچیدہ اور گمراہ کن پالیسیوں سے جنوبی ایشیا میں امن کو خطرہ : پاکستان

اسلام آباد ۔ 23 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : پاکستان نے آج اس بات کی تردید کی کہ اس کی سرزمین پر دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہیں موجود ہیں اور کہا کہ یہ صرف دیگر ممالک کی پیچیدہ پالیسیاں اور گمراہ کن سیاست ہے جس نے پاکستان کے خلاف محاذ آرائی کر رکھی ہے اور جنوبی ایشیاء میں کشیدگی پیدا کردی ہے ۔ یاد رہے کہ صرف ایک روز قبل ہی امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے پاکستان کو دہشت گردی کی پشت پناہی کرنے پر زبردست سرزنش کی تھی ۔ پاکستان کے دفتر خارجہ سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ جنوبی ایشیا میں امن و استحکام اس لیے قائم نہیں ہورہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کی سنجیدگی سے حل کرنے کی کوئی کوششیں نہیں کی جارہی ہے ۔ ہند و پاک کے درمیان بات چیت بھی تعطل کا شکارہے ۔ یہ ردعمل ٹرمپ کے افغانستان اور جنوبی ایشیا پر امریکہ کی نئی پالیسی کے اعلان کے بعد سامنے آیا ۔ ٹرمپ نے یہ خواہش بھی کی ہے کہ جنگ زدہ افغانستان میں استحکام کے لیے ہندوستان کو بھی کلیدی رول ادا کرنا چاہئے ۔ دفتر خارجہ کے بیان کے مطابق ٹرمپ کی نئی پالیسی کے اعلان کے بعد رات دیر گئے پاکستانی کابینہ کا اجلاس طلب کیا گیا تھا جب کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اس معاملہ کو کل منعقد شدنی قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں بھی اٹھائیں گے ۔ ٹرمپ نے پاکستان کے بارے میں جو کچھ ریمارک کیا وہ یقینا مایوس کن ہے ۔

TOPPOPULARRECENT