Saturday , September 22 2018
Home / سیاسیات / پی ڈی پی نے این سی کی پیشکش ٹھکرادی

پی ڈی پی نے این سی کی پیشکش ٹھکرادی

سرینگر ؍ جموں ۔ 14 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پی ڈی پی نے آج اپنی کٹر حریف پارٹی نیشنل کانفرنس کی طرف سے تشکیل حکومت کیلئے تائید کی پیشکش کو عملاً ٹھکرا دیا، جس سے گذشتہ ماہ کے اسمبلی انتخابات میں منتشر فیصلے کے نتیجہ میں پیدا شدہ سیاسی تعطل کی عاجلانہ یکسوئی کے امکانات ماند پڑ گئے ہیں۔ یہ دونوں پارٹیوں میں لفظی جنگ چھڑ گئی ہے جبکہ ایک روز

سرینگر ؍ جموں ۔ 14 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پی ڈی پی نے آج اپنی کٹر حریف پارٹی نیشنل کانفرنس کی طرف سے تشکیل حکومت کیلئے تائید کی پیشکش کو عملاً ٹھکرا دیا، جس سے گذشتہ ماہ کے اسمبلی انتخابات میں منتشر فیصلے کے نتیجہ میں پیدا شدہ سیاسی تعطل کی عاجلانہ یکسوئی کے امکانات ماند پڑ گئے ہیں۔ یہ دونوں پارٹیوں میں لفظی جنگ چھڑ گئی ہے جبکہ ایک روز قبل نیشنل کانفرنس کے کارگذار صدر عمرعبداللہ نے گورنر این این ووہرہ کو مکتوب تحریر کرتے ہوئے انہیں تشکیل حکومت میں پی ڈی پی کو اپنی پارٹی کی تائید کے تعلق سے باقاعدہ مطلع کیا تھا۔ پی ڈی پی جو 87 رکنی ایوان میں 28 نشستوں کے ساتھ واحد بڑی جماعت کے طور پر ابھری ہے، اس نے واضح کردیا کہ تائید کی پیشکش اسے قبول نہیں۔ پی ڈی پی کے ترجمان اعلیٰ نعیم اختر نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ انتخابات میں عوام نے نیشنل کانفرنس کے خلاف ووٹ دیا ہے اور محض 15 نشستوں کے ساتھ وہ (این سی) تشکیل حکومت کے بارے میں فیصلہ نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر میں عوام نے تبدیلی کیلئے ووٹ دیا ہے اور نیشنل کانفرنس کے ساتھ اتحاد عوام کی خواہش کے عدم احترام کے مترادف ہوگا۔ اس دوران کئی وفود نے آج گورنر ووہرہ سے ملاقات کرتے ہوئے انہیں جموں و کشمیر سے متعلق مختلف مسائل کی بابت واقف کرایا۔ کٹھوا ایم ایل اے راجیو جسروتیا زیرقیادت 15 رکنی وفد نے گورنر کو ایک یادداشت پیش کی۔ کنگن رکن اسمبلی میاں الطاف احمد اور امیرا کدال ایم ایل اے سید الطاف بخاری نے بھی گورنر سے علحدہ ملاقات کرتے ہوئے اپنے اپنے حلقہ کے عوام کو درپیش مختلف مسائل کو اجاگر کیا۔ ٹور آپریٹرس کے سہ رکنی وفد نے بھی گورنر سے ملاقات کی۔

TOPPOPULARRECENT