Tuesday , January 23 2018
Home / سیاسیات / پی ڈی پی کی جانب سے نیشنل کانفرنس کی پیشکش قبول کرنے سے گریز کا امکان

پی ڈی پی کی جانب سے نیشنل کانفرنس کی پیشکش قبول کرنے سے گریز کا امکان

سرینگر ۔ 14 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) نے جو جموں و کشمیر اسمبلی انتخابات میں واحد سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری ہے، اشارہ دیا کہ وہ نیشنل کانفرنس کی تشکیل حکومت کیلئے تائید کا پیشکش قبول کرنے سے گریز کرے گی۔ پارٹی کے ترجمان اعلیٰ نعیم اختر نے کہا کہ عوام نے نیشنل کانفرنس کے خلاف ووٹ دیا ہے، اسے صرف 15 نشستیں حاصل ہوئی ہیں، چنانچہ وہ (نیشنل کانفرنس) تشکیل حکومت کے بارے میں فیصلہ نہیں کرسکتی۔ نعیم اختر نے کہا کہ نیشنل کانفرنس کے کارگزار صدر عمر عبداللہ نے گورنر این این ووہرا کو کل جو مکتوب روانہ کرتے ہوئے اپنی پارٹی کی پی ڈی پی کو تائید کے بارے میں اطلاع دی ہے اور ان سے خواہش کی ہے کہ تشکیل حکومت کے بارے میں ان کی پارٹی سے مشاورت کے بغیر کوئی فیصلہ نہ کیا جائے، رد عمل ظاہر کرتے ہوئے پی ڈی پی کے ترجمان اعلیٰ نعیم اختر نے کہا کہ تشکیل حکومت پی ڈی پی کا واحد مقصد نہیں ہے۔ اگر ایسا ہوتا تو وہ اب تک تشکیل حکومت کا دعویٰ پیش کرچکی ہوتی۔ اب نیشنل کانفرنس نے ہماری تائید پر مبنی مکتوب گورنر کو روانہ کیا ہے۔ بی جے پی کے ساتھ تشکیل حکومت کی بات چیت کے بارے میں انہوں نے کہا کہ پس پردہ روابط جاری ہیں۔ باقاعدہ بات چیت کا آغاز ابھی نہیں ہوا ہے۔ تاہم انہوں نے اس کی تفصیلات کا انکشاف نہیں کیا۔ پی ڈی پی اور بی جے پی قبل ازیں بھی بات چیت کرچکے ہیں لیکن کوئی معاہدہ کرنے سے قاصر رہیں۔

TOPPOPULARRECENT