Tuesday , January 23 2018
Home / جرائم و حادثات / چادر گھاٹ میں مسلم آٹو ڈرائیور کو زدوکوب کے بعد کشیدگی

چادر گھاٹ میں مسلم آٹو ڈرائیور کو زدوکوب کے بعد کشیدگی

حیدرآباد ۔ 8 ؍ جون (سیاست نیوز) چادرگھاٹ موسی نگر میں پیش آئے ایک واقعہ میں اشرار کی جانب سے مسلم آٹو ڈرائیور کو زدوکوب کرنے کا واقعہ فرقہ وارانہ رنگ اختیار کرلیا ۔ ذرائع نے بتایا کہ چادرگھاٹ کاز وے بریج سے متصل بھو لکشمی مندر میں پوجا کے بعد ایشورماں نامی خاتون چکڑپلی جانے کے لئے فیروز نامی آٹو ڈرائیور کو سواری کے لئے کہا لیکن اس ک

حیدرآباد ۔ 8 ؍ جون (سیاست نیوز) چادرگھاٹ موسی نگر میں پیش آئے ایک واقعہ میں اشرار کی جانب سے مسلم آٹو ڈرائیور کو زدوکوب کرنے کا واقعہ فرقہ وارانہ رنگ اختیار کرلیا ۔ ذرائع نے بتایا کہ چادرگھاٹ کاز وے بریج سے متصل بھو لکشمی مندر میں پوجا کے بعد ایشورماں نامی خاتون چکڑپلی جانے کے لئے فیروز نامی آٹو ڈرائیور کو سواری کے لئے کہا لیکن اس کے انکار پر یادگیری اور دیگر نے اسے زدوکوب کرنا شروع کر دیا اور اس واقعہ کے بعد موسی نگر کے مقامی عوام فرقہ وارانہ نوعیت کی کشیدگی کو دیکھ کر کثیر تعداد میں اکٹھا ہوگئی ۔ اس بات کی اطلاع چادرگھاٹ پولیس کو ملنے پر پولیس کی دو ٹیمیں وہاں پہنچ گئی اور موسی نگر کی عوام پر آندھادھند لاٹھی چارج کر دیا جس میں اسماء سلطانہ ‘ کوثر سلطانہ ‘ محسن خان اور دیگر زخمی ہوگئے ۔ پولیس کے لاٹھی چارج میں زخمی اسماء سلطانہ کے سر پر گہرا زخم آیا اور اسے دواخانہ عثمانیہ میں چار ٹانکے لگائے گئے ۔ حالات کو قابو میں کرنے کے لئے ایسٹ زون میں واقع کئی پولیس اسٹیشنس کے عملہ کو وہاں طلب کر لیا گیا اور حالات کو فوری قابو میں کرلیا گیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ وینکٹیش نے اس سلسلہ میں فیروز آٹو ڈرائیور کے خلاف شکایت درج کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT