Wednesday , May 23 2018
Home / Top Stories / چارہ اسکام مقدمات :لالو پرساد کی ضمانت ، جیل سے رہائی کا حکم

چارہ اسکام مقدمات :لالو پرساد کی ضمانت ، جیل سے رہائی کا حکم

RANCHI, MAY 16 (UNI):- Former Bihar Chief Minister and RJD supremo Lalu Prasad Yadav arrives at Birsa Munda International Airport after granted bail for 6 weeks, in Ranchi on Wednesday. UNI PHOTO-97U

جھارکھنڈ ہائیکورٹ کے رہائی کے حکم میں تحت کی عدالتوں کے فیصلے کی توثیق

رانچی ۔ 16 مئی ۔( سیاست ڈاٹ کام ) راشٹریہ جنتادل کے صدر لالو پرساد کو آج تحت کی عدالتوں نے جیل سے رہائی منظور کردی جو جھارکھنڈ ہائیکورٹ کے فیصلے کے مطابق ہے جو اُن کی عبوری ضمانت پر چارہ اسکام کے تین مقدمات میں طبی بنیادوں پر رہائی کی گنجائش فراہم کرتی ہے ۔ رہائی کا حکم تمام تینوں چارہ اسکامس مقدمات کے لئے ہے جن میں لالو پرساد کو مجرم قرار دیا گیا ہے ۔ اُن کے وکیل پربھات کمار نے کہا کہ خصوصی سی بی آئی کے عدالتی جج شیوپال سنگھ نے اُن کی رہائی کا حکم جاری کرنے منظور کرلیا ۔ دو مقدمات میں آر سی 64A/96 ( چائی باسا خزانہ ) اور RC38A/96 (ڈومکا ) جو جج ایس ایس پرساد کی عدالت کی جانب سے رہائی کی اجازت کی گنجائش فراہم کرتے ہیں مقدمہ نمبر RC68A/96 (چائی باسا ) کے لئے بھی رہائی کی گنجائش فراہم کرتے ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ انھوں نے رسومات کی تکمیل کردی ہے ۔ بانڈ پر دستخط ہوچکے ہیں ، ضمانتیں 50,000 روپئے فی کس تین مقدمات کیلئے داخل کرکے رہائی کا حکم حاصل کیا جاچکا ہے ۔ قانون داں نے کہا کہ ضمانت پر رہائی چارہ اسکام کے تینوں مقدمات کے لئے قابل عمل ہوگی اور جیل سے رہائی کے دن سے شمار کی جائے گی ۔ راشٹریہ جنتادل کے جنرل سکریٹری رُکن اسمبلی بھولا یادو جو رانچی میں عارضی طورپر مقیم ہیں کہا کہ وہ پٹنہ جانے کی منصوبہ بندی کررہے ہیں ۔ شام کی پرواز سے وہ پٹنہ جائیں گے تاکہ بیرسا منڈا قید خانہ آرٹ ورک کی رسمی کارروائیوں کی تکمیل کرسکیں۔ ایک خصوصی سی بی آئی عدالت نے لالو یادو کو 24 جنوری کو RC68A/96 مقدمہ میں جو جعلسازی کے ذریعہ 37.62 کروڑ روپئے چائی باسا خزانہ سے حاصل کرنے کے بارے میں ہے اُنھیں پانچ سال کی سزائے قید سنائی تھی ۔ راشٹریہ جنتادل کے صدر RC64A/96 مقدمہ میں جو جعلسازی کے ذریعہ 89.27 لاکھ روپئے دیو گھر خزانہ سے 1990 ء کے دہائی میں حاصل کرنے کے بارے میں ہے 3.5 سال کی سزائے قید سنائی تھی ۔ 23 ڈسمبر گزشتہ سال کو اُنھیں جیل بھیج دیا گیا تھا ۔ سی بی آئی عدالت نے لالو یادو کو مقدمہ RC38A/96 کے لئے جو جعلسازی کے ذریعہ 3.13 کروڑ روپئے ڈومکا خزانہ سے 1990 ء کے دہائی کے اوائیل میں حاصل کرنے کے بارے میں ہے ، مجرم قرار دیا تھا ۔
بیرسا منڈا جیل رانچی کے عہدیداروں نے علحدہ طورپر اُنھیں تین دن کی پیرول پر 10 مئی کو اپنے بڑے بیٹے تیج پرتاب یادو کی شادی میں 12 مئی کو پٹنہ میں شرکت کے لئے رہا کیا تھا ۔ جیل واپس ہونے کے بعد آر جے ڈی کے سربراہ کو آج تک انتظار کرنا پڑا تاکہ رہائی کا حکم تحت کی عدالتوں سے حاصل کیا جاسکے جبکہ ہائیکورٹ کا حکمنامہ جس میں 6 ہفتے کی ضمانت پر رہائی گزشتہ ہفتہ طبی بنیادوں پر منظور کی گئی تھی آج وہاں پہونچا ۔ آج 69 سالہ سابق چیف منسٹر کو طبی بنیادوں پر رہا کرنے کا حکم دیا ۔ وہ ذیابیطس ، بلڈ پریشر ، گردے کے امراض اور دیگر امراض میں مبتلا ہیں۔ بھولا یادو نے کہا کہ پٹنہ واپسی کے بعد پرساد دہلی ، ممبئی اور دیگر مقدمات کو خصوصی علاج کیلئے جائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT