Saturday , November 17 2018
Home / شہر کی خبریں / چار سرکردہ بینکس کے کھاتوں میں اقل ترین رقم رکھنا لازمی

چار سرکردہ بینکس کے کھاتوں میں اقل ترین رقم رکھنا لازمی

رقم کی کمی پر جرمانہ اور جی ایس ٹی کی رقم وصول کرنے کا فیصلہ ، کھاتہ داروں کو چوکس رہنے کی ضرورت
حیدرآباد۔7نومبر(سیاست نیوز) ملک کے 4سرکردہ بینکوں میں کھاتہ رکھنے والے کھاتہ داروں کو چوکنا رہنے کی ضرورت ہے کیونکہ ان کے بینک کھاتوں میں درکار اقل ترین رقم نہ ہونے کی صورت میں ان کے کھاتوں سے بینک جرمانہ اور جی ایس ٹی عائد کرتے ہوئے وصول کرلے گا۔ اسٹیٹ بینک آف انڈیا‘ آئی سی آئی سی آئی ‘ ایچ ڈی ایف سی کے علاوہ پنجاب نیشنل بینک نے اعلان کیا ہے کہ ماہانہ اقل ترین رقم کھاتہ میں موجود نہ ہونے کی صورت میں ان کھاتوں پرجرمانہ معہ جی ایس ٹی عائد کرتے ہوئے رقم منہاء کرلی جائے گی۔ اسٹیٹ بینک آف انڈیا کی جانب سے کئے گئے فیصلہ کے مطابق ایس بی آئی کے کھاتہ داروں کو اپنے کھاتہ میں 3000روپئے اقل ترین بیالنس رکھنا ہوگا اور جن کھاتوں میں اقل ترین بیالنس کا نصف یعنی 1500 روپئے بھی نہیں ہوں گے ان کھاتوں پر 10 روپئے ماہانہ جرمانہ اور اس کے علاوہ جی ایس ٹی عائد کرتے ہوئے رقم منہاء کرلی جائے گی ۔ 3000 روپئے اقل ترین بیالنس کی حد شہری علاقہ کے بینکوں کے کھاتہ داروں کیلئے ہے جبکہ نیم شہری علاقوں کے کھاتہ داروں کے لئے 2000 روپئے اقل ترین بیالنس کی حد رکھی گئی ہے اور اس کا 50 فیصد بھی نہ رکھنے والوں کے کھاتوں سے 7.50 روپئے کے علاوہ جی ایس ٹی عائد کردیاجائے گا۔ایس بی آئی کی جانب سے شہری علاقوں کے کھاتہ داروں کے لئے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق 50سے 75 فیصد اقل ترین رقم سے کم بیالنس کی صورت میں ان سے 12 روپئے کے علاوہ جی ایس ٹی وصول کیا جائے گا جبکہ 75 فیصد سے کم بیالنس رکھنے والوں سے 15 روپئے کے علاوہ جی ایس ٹی وصول کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ اسی طرح نیم شہری اور دیہی علاقوں کے کھاتہ داروں کے لئے بھی علحدہ علحدہ حد مقرر کی گئی ہے اور دیہی علاقو ںمیں کھاتہ دار کو اس طرح کے کسی بھی جرمانہ سے محفوظ رہنے کیلئے بینک کھاتہ میں 1000 روپئے جمع رکھنے ہوں گے ۔ آئی سی آئی سی آئی کی جانب سے جاری کردہ ہدایات کے مطابق اس بینک کے کھاتہ داروں کو 10000 روپئے اقل ترین بیالنس رکھنا ہوگا اور یہ حد میٹرو شہروں اور شہری علاقوں کے لئے ہے جبکہ نیم شہری علاقوں کیلئے حد 5000 روپئے رکھی گئی ہے اور دیہی علاقوں کیلئے حد 2000 روپئے رکھی گئی ہے۔ایچ ڈی ایف سی کے میٹرو شہروں اور شہری علاقوں کے کھاتہ داروں کو اپنے کھاتوں میں 10 ہزار روپئے کی رقم بطور اقل ترین بیالنس رکھنی ہوگی جبکہ نیم شہری علاقوں میں 5000 روپئے اقل ترین بیالنس کی حد مقرر کی گئی ہے اسی طرح دیہی علاقوں میں 2500 کی حد مقرر کی گئی ہے۔پنجاب نیشنل بینک نے دیہی علاقہ کے کھاتہ داروں کیلئے 1000 روپئے اقل ترین بیالنس کی حد مقرر کی ہے جبکہ نیم شہری علاقوں کے کھاتہ داروں کے لئے 2000 روپئے کی حد مقرر کی گئی ہے اسی طرح شہری علاقوں کے کھاتہ داروں کے لئے 2000 روپئے کی حد مقرر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ان 4بینکوں میں اقل ترین بیالنس نہ رکھنے والے کھاتہ داروں پربینک کی جانب سے جرمانہ عائد کرتے ہوئے ان سے جرمانہ کے علاوہ اس رقم پر عائد ہونے والا جی ایس ٹی بھی وصول کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT