Wednesday , December 12 2018

چالانات کی رقم وصول کرنے پر ٹریفک پولیس کی توجہ ‘ خصوصی ٹیم کی تشکیل

حیدرآباد 15 ڈسمبر (سیاست نیوز) ٹریفک چالانات کی وصولی کیلئے حیدرآباد ٹریفک پولیس عنقریب اسپیشل اسکواڈ تشکیل دے رہی ہے تا کہ 40 لاکھ زیر تعمیل چالانات کی 81 کروڑ رقم وصول کی جاسکے ۔ زیر تعمیل چالانات میں دونوں شہروںکے 13 لاکھ موٹر سائیکل ، 5 لاکھ کاریں اور ایک لاکھ لاریاں اور آٹو شامل ہیں ۔چالانات کی وصولی کیلئے ٹریفک پولیس نے تیاریاں مک

حیدرآباد 15 ڈسمبر (سیاست نیوز) ٹریفک چالانات کی وصولی کیلئے حیدرآباد ٹریفک پولیس عنقریب اسپیشل اسکواڈ تشکیل دے رہی ہے تا کہ 40 لاکھ زیر تعمیل چالانات کی 81 کروڑ رقم وصول کی جاسکے ۔ زیر تعمیل چالانات میں دونوں شہروںکے 13 لاکھ موٹر سائیکل ، 5 لاکھ کاریں اور ایک لاکھ لاریاں اور آٹو شامل ہیں ۔چالانات کی وصولی کیلئے ٹریفک پولیس نے تیاریاں مکمل کرلی ہیں اور عنقریب اسٹیٹ بینک آف حیدرآباد ،اسٹیٹ بینک آف انڈیا، آئی این جی ویسیاء بینک کے علاوہ پوسٹ آفیسس میں بھی خصوصی کاونٹرس قائم کئے جائیں گے تا کہ عوام کو چالانات کی ادائیگی میں سہولت ہوسکے ۔ اس سلسلہ میں تفصیلات بتاتے ہوئے ڈپٹی کمشنر پولیس ٹریفک مسٹر اے وی رنگا ناتھ نے بتایا کہ ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف ٹریفک پولیس کی خصوصی مہم کی تیاریاں کی جارہی ہے جس کے تحت چالانات کی رقم کی وصولی کیلئے توجہ مرکوز ہے ۔انہوں نے بتایا کہ تین سے زائد ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے افراد اور چالان کی عدم ادائیگی کے نتیجہ میں ٹریفک پولیس انہیں گرفتار کرکے ان کے خلاف چارج شیٹ پیش کرے گی۔ مسٹر رنگناتھ نے مزید بتایا کہ زیر تعمیل چالانات کی فہرست میں 19 لاکھ چالانات ایسے ہیں جن میں اکثریت نے تین سے زائد مرتبہ قوانین کی خلاف ورزی کی ہے ۔ حالت نشہ میں گاڑی چلانے والے (ڈرنکن ڈرائیونگ )میں ملوث افراد کے خلاف بھی سخت کارروائی کی جارہی ہے جس کے تحت تین سے زائد مرتبہ چالانات کئے جانے والے افراد کے ڈرائیونگ لائسنس منسوخ کئے جائیں گے ۔ بتایا جاتا کہ ایڈیشنل کمشنر آف پولیس ٹریفک مسٹر جتیندر نے روڈ ٹرانسپورٹ اتھاریٹی حکام کو تین افراد مسٹر رتیش سنگھ، مسٹر سنتوش اور مسٹر بی وی سبرامنیم جنہیں سابق میں دو مرتبہ حالت نشہ میں گاڑی چلانے کے الزام میں چالان اور جیل کی سزاء سنائی گئی تھی کہ ڈرائیورنگ لاسنس معطل کرنے کیلئے مکتوب روانہ کیا ہے جس کے نتیجہ میں آ رٹی ا ے حکام نے مذکورہ تین افراد کو وجہ نما نوٹس جاری کی ہے ۔ واضح رہے کہ ٹریفک چالانات کیلئے نقد رقم کا لزوم ہٹا دیا گیا ہے جبکہ می سیوا اور دیگر بینک کاونٹرس میں رقم کو ادا کرنے کے احکامات پہلے ہی جاری کئے گئے ہیں۔سینئر پولیس عہدیداروں کا یہ ماننا ہے کہ اس اقدام سے محکمہ ٹریفک میں رشوت خوری پر قابو پایا جاسکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT