چلی نے ارجنٹینا کو شکست دے کر پہلا کوپا امریکہ خطاب جیت لیا

سانٹیاگو 5 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) کوپا امریکہ کے فائنل میں چلی نے پنالٹی شوٹ آوٹ میں لیونل میسی کی ارجنٹینا کو شکست سے دوچار کرتے ہوئے پہلا خطاب جیت لیا ہے ۔ چلی کی ٹیم گذشتہ 99 سال میں کوپا امریکہ خطاب میں کامیابی کیلئے کوشش کر رہی تھی لیکن اسے ارجنٹینا کے خلاف کل ہوئے فائنل میچ میں اولین خطاب حاصل کرنے میں کامیابی حاصل ہوئی ہے ۔ کوپ

سانٹیاگو 5 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) کوپا امریکہ کے فائنل میں چلی نے پنالٹی شوٹ آوٹ میں لیونل میسی کی ارجنٹینا کو شکست سے دوچار کرتے ہوئے پہلا خطاب جیت لیا ہے ۔ چلی کی ٹیم گذشتہ 99 سال میں کوپا امریکہ خطاب میں کامیابی کیلئے کوشش کر رہی تھی لیکن اسے ارجنٹینا کے خلاف کل ہوئے فائنل میچ میں اولین خطاب حاصل کرنے میں کامیابی حاصل ہوئی ہے ۔ کوپا امریکہ کا فائنل مقابلہ چلی اور ارجنٹینا کے مابین کسی گول کے بغیر ختم ہوگیا ۔ مقررہ وقت کے بعد اضافی وقت بھی دیا گیا تھا تاہم اس میں بھی دونوں ٹیمیں کوئی گول نہیں کرسکیں ۔ چلی نے پنالٹی شوٹ آوٹ میں 4 – 1 سے کامیابی حاصل کرلی ۔ چلی کیلئے آرسینل کیلئے کھیلنے والے الیکسس سانچیز نے گول داغتے ہوئے کامیابی کو یقینی بنایا ۔ فیصلہ کن شوٹ میں سانچیز نے ارجنٹینا کے گول کیپر سرگیو رومیرو کو چکمہ دے کر گول کیا اس کے ساتھ ہی سانٹیاگو کے نیشنل اسٹیڈیم میں موجود 45 ہزار شائقین خوشی سے جھوم اٹھے اور جشن منانے لگے ۔ چلی کو ابتداء سے ہی پنالٹی شوٹ آوٹ میں سبقت دکھ رہی تھی ۔ چلی کے گونزالو ہیگوائین نے پہلا گول کیا جبکہ چلی کے گول کیپر کلاڈیو براوو نے بینگا کی شوٹ کو روک لیا ۔ ارجنٹینا کے کپتان لیونل میسی اس موقع پر مایوس نظر آ رہے تھے ۔ میسی اپنی ٹیم کو 22 سال میں پہلا انٹرنیشنل خطاب دلانے کی خواہاں تھے لیکن وہ ایسا نہیں کرسکے ۔ لیونل میسی کلب کی سطح پربارسیلونا کیلئے کھیلتے ہوئے دنیا بھر میں بہترین کامیابیاں حاصل کرچکے ہیں

لیکن وہ ارجنٹینا کیلئے کوئی بین الاقوامی خطاب نہیں حاصل کرپائے ہیں اور اس خواہش کا میسی نے بارہا اظہار بھی کیا ہے ۔ ارجنٹینا کو گذشتہ سال کے ورلڈ کپ میں بھی جرمنی کے خلاف اضافی وقت میں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا ۔ کوپا امریکہ کپ میں چلی کی یہ ارجنٹینا کے خلاف اولین کامیابی تھی ۔ چلی کے اسٹار اسٹرائیکر آرٹورو ویڈال نے کہا کہ ان کی ٹیم کیلئے یہ ایک خواب تھا جو شرمندہ تعبیر ہوگیا ہے ۔ ہم نے اس کامیابی کیلئے بہت محنت کی تھی ۔ مڈ فیلڈر نے کہا کہ چلی اس بار کوپا امریکہ کپ میں کامیابی کیلئے پر عزم تھی حالانکہ اسے گذشتہ سال ہوئے ورلڈ کپ میں پنالٹی شوٹ آوٹ ہی کے ذریعہ شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا ۔ اسٹرائیکر سانچیز نے کہا کہ ہم نے برازیل ہی میں کہہ دیا تھا کہ ہم اس بار کوپا امریکہ کپ جیتنے کی کوشش کرینگے ۔ یقینی طور پر سبھی کھلاڑی بہترین ہیں اور ہم اس کامیابی کے مستحق ہیں۔ چلی کے ارجنٹینائی نژاد کوچ جورگ سامپاٰلی نے کہا کہ ان کی ٹیم کامیابی کی مستحق تھی ۔ سامپاٰلی نے کہا کہ دنیا کی بہترین ٹیموں میں سے ایک ارجنٹینا کے خلاف ان کی ٹیم کو بہترین صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنا تھا ۔ ارجنٹینا کی ٹیم میں کئی زبردست کھلاڑی ہیں۔ ہم کو چاہئے تھا کہ 90 منٹ کے اصل وقت ہی میں کامیابی حاصل کرلیں تاہم بالآخر ہم اپنا خطاب حاصل کرچکے ہیں۔ ارجنٹینا کے کھلاڑی تاہم اس افسوسناک شکست پر مایوس تھے ۔

مڈ فیلڈر جاویر ماسکرانو ارجنٹینا کی ٹیم میں تین مرتبہ کوپا امریکہ فائنل کھیل چکے ہیں اور تینوں ہی مرتبہ ٹیم کو شکست ہوئی ہے ۔ اس کے علاوہ وہ ورلڈ کپ میں شکست کھانے والی ٹیم کا بھی حصہ تھے ۔ ماسکرانو نے کہا کہ وہ شکستوں کے اس سلسلہ پر تبصرہ کرنے کے موقف میں نہیں ہیں۔ تین مرتبہ فائنل میں شکست آسان نہیں ہوتی ۔ انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ ساری محنت کے بعد قسمت نے کامیابی کیلئے ہماری یاوری نہیں کی ۔ ارجنٹینا کے کوچ گیرارڈو مارٹینو نے تاہم اپنی ٹیم کی شکست پر کھلاڑیوں کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ انہوں نے کہا کہ کھلاڑیوں کیلئے کئی بہترین مواقع تھے تاہم ان سے استفادہ نہیں کیا جاسکے ۔ یہ ایسے مواقع تھے جن سے میچ کے نتیجہ کو بدلا جاسکتا تھا ۔ جب دونوں ٹیموں کے مابین فائنل مقابلہ کا آغاز ہوا تھا چلی کی ٹیم نے اپنے گھریلو ماحول سے فائدہ اٹھانے تیز رفتار کھیل کا آغاز کیا تھا ۔ اس کے کھلاڑیوں میں بھی جوش و خروش تھا تاہم ارجنٹینا کی ٹیم نے حالات کو بہتر انداز میں سمجھتے ہوئے بتدریج اپنے کھیل میں تیزی پیدا کی ۔ دونوں ٹیمیں کافی جدوجہد کرتی رہیں لیکن کسی کو بھی گول کرنے میں کامیابی نہیں ملی تھی ۔ ارجنٹینا کے کھلاڑیوں کو دو ایک مواقع ضرور ملے تھے جن میں گول بنائے جاسکتے تھے تاہم اس کے کھلاڑی ان مواقع سے فائدہ اٹھانے میں کامیاب نہیں ہوسکے ۔

TOPPOPULARRECENT