Wednesday , November 22 2017
Home / جرائم و حادثات / چندرائن گٹہ حملہ کیس، ایک اور انسپکٹر کا بیان قلمبند

چندرائن گٹہ حملہ کیس، ایک اور انسپکٹر کا بیان قلمبند

حیدرآباد 16 مارچ (سیاست نیوز) چندرائن گٹہ حملہ کیس کی سماعت کے دوران آج ایک اور انسپکٹر نے اپنا بیان قلمبند کروایا اور اِس گواہ پر جرح کیا گیا۔ ضلع میدک سے وابستہ انسپکٹر پرتاپ ریڈی پر وکیل دفاع اچھوتانند ریڈی نے جرح کے دوران مختلف سوال کئے۔ گواہ نے یہ بتایا کہ عبداللہ بن یونس یافعی کے آتشیں اسلحہ سے متعلق تمام دستاویزات اکٹھا کئے اور ایک میمورنڈم کی شکل میں اُنھوں نے رپورٹ پیش کی۔ اُنھوں نے جرح کے دوران عدالت کو یہ بتایا کہ اسلحہ لائسنس کے تجدید یا اجرائی کے لئے درخواست گذار پر کسی بھی قسم کے فوجداری کیس یا کسی بھی قسم کی غیر قانونی سرگرمیوں پر اسلحہ لائسنس جاری نہیں کیا جاتا ہے۔ اُنھوں نے بتایا کہ رئیل اسٹیٹ کاروبار اور غیر قانونی قبضوں میں ملوث ہونے والوں کو بھی لائسنس نہیں دیا جاتا۔ مسٹر پرتاپ ریڈی نے بتایا کہ اسلحہ لائسنس کا نئے لائسنس اور پرانے لائسنس کی تجدید کے لئے درخواست گذار کی تمام تفصیلات حاصل کی جاتی ہیں اور اُس کے خلاف رپورٹ ہونے پر وہ لائسنس کے لئے نااہل ہوجاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT