Monday , June 18 2018
Home / شہر کی خبریں / چندرابابو کو دھکہ ، کپم اسمبلی سے بی جے پی امیدوار کا بھی پرچہ نامزدگی

چندرابابو کو دھکہ ، کپم اسمبلی سے بی جے پی امیدوار کا بھی پرچہ نامزدگی

تلگودیشم قائدین کے رویہ سے اظہار ناراضگی، تلسی ناتھ کا بیان

تلگودیشم قائدین کے رویہ سے اظہار ناراضگی، تلسی ناتھ کا بیان

حیدرآباد 20 اپریل (سیاست نیوز) آندھراپردیش میں تلگودیشم ۔ بی جے پی اتحاد کے باوجود صدر تلگودیشم پارٹی مسٹر این چندرابابو نائیڈو کو اس وقت زبردست دھکہ لگا جبکہ خود مسٹر نائیڈو کے حلقہ اسمبلی کپم میں بی جے پی نے اتحاد سے انحراف کرتے ہوئے مسٹر نائیڈو کے خلاف اپنے امیدوار کے ذریعہ پرچہ نامزدگی داخل کروایا۔ جس کے نتیجہ میں مسٹر نائیڈو نے ضلع چتور کے اپنے حلقہ اسمبلی کپم کو تلگودیشم پارٹی کا ایک طاقتور قلعہ قرار دیا کرتے تھے۔ بی جے پی امیدوار کے پرچہ نامزدگی داخل کئے جانے کے بعد سنسنی پیدا ہوگئی۔ باوثوق ذرائع کے مطابق بتایا جاتا ہے کہ 19 اپریل کو سیما آندھرا میں پرچہ نامزدگی داخل کرنے کی آخری تاریخ کے دن ضلع چتور کے بی جے پی جنرل سکریٹری مسٹر تلسی ناتھ نے اپنے دو سیٹ پرچہ نامزدگیاں داخل کئے اور اُنھوں نے بتایا کہ محض مقامی تلگودیشم پارٹی قائدین کے رویہ سے ناراضگی کے باعث ہی اپنا پرچہ نامزدگی صدر تلگودیشم پارٹی امیدوار کے خلاف داخل کیا گیا۔

انھوں نے مزید کہاکہ تلگودیشم پارٹی کے ساتھ مل کر مسٹر نائیڈو کو سابق کے مقابلہ میں زائد اکثریت کے ساتھ کامیابی کے لئے وہ خصوصی دلچسپی رکھتے تھے لیکن تلگودیشم پارٹی کے ضلعی و حلقہ اسمبلی سطح کے قائدین کے معاندانہ رویہ اور انھیں عزت و احترام حاصل نہ ہونے کے باعث ہی تلگودیشم پارٹی امیدوار کے خلاف پرچہ نامزدگی داخل کرنے پر مجبور ہوگئے۔ مسٹر تلسی ناتھ نے تلگودیشم قائدین کے طرز عمل کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہاکہ مسٹر چندرابابو نائیڈو کے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کیلئے آئے ہوئے ان کے فرزند مسٹر لوکیش نائیڈو کے دورہ کپم سے تک انھیں تلگودیشم پارٹی قائدین واقف کروانا تک گوارہ نہیں کیا اور ضلع چتور بالخصوص حلقہ اسمبلی کپم کے تعلق سے نہ ہی کوئی اطلاع انھیں دی جارہی ہے اور نہ ہی انھیں کہیں مدعو کیا جارہا ہے جبکہ تلگودیشم ۔ بی جے پی کے ساتھ انتخابی مفاہمت و اتحاد کے ذریعہ ہی انتخابات میں حصہ لے رہی ہے۔ لیکن ضلع چتور بالخصوص حلقہ اسمبلی کپم میں تلگودیشم پارٹی قائدین نے ان کے ساتھ توہین آمیز رویہ اختیار کئے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے انھیں کافی تکلیف پہونچی ہے۔ اُنھوں نے مزید کہاکہ وہ اپنے پرچہ نامزدگی سے ہرگز دستبرداری اختیار نہیں کریں گے بلکہ بی جے پی قیادت کو تلگودیشم پارٹی کے طرز عمل سے واقف کرواکر اپنے موقف پر برقرار رہنے کی کوشش کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT