Wednesday , January 23 2019

چندرابابو کی دہلی میں اپوزیشن قائدین سے ملاقات

تحریک عدم اعتماد پر تائید کیلئے بی جے پی کے حلیف قائدین سے بھی بات چیت
نئی دہلی 3 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آندھراپردیش کے چیف منسٹر این چندرابابو نائیڈو نے مرکز میں حکمراں بی جے پی زیرقیادت این ڈی اے محاذ سے اپنی تلگودیشم پارٹی کی علیحدگی کے بعد پہلے دورہ دہلی کے موقع پر مختلف اپوزیشن جماعتوں اور بی جے پی کی حلیف بعض جماعتوں کے قائدین سے ملاقات کی۔ نائیڈو نے کانگریس کے ویرپا موئیلی اور این سی پی کے شردپوار کے علاوہ اکالی دل کی سینئر لیڈر اور مرکزی وزیر ہرسمراٹ کور بادل سے ملاقات کی۔ این ڈی اے حکومت کے خلاف تلگودیشم پارٹی کی طرف سے پیش کردہ تحریک عدم اعتماد پر حصول تائید کے لئے انھوں نے پارلیمنٹ کے سنٹرل ہال میں ان قائدین سے ملاقات کی۔ تلگودیشم پارٹی نے مرکز پر اس جنوبی ریاست کو نظرانداز کرنے کا الزام عائد کیا اور کہاکہ آندھراپردیش کو خصوصی موقف دینے میں این ڈی اے حکومت ناکام ہوگئی ہے۔ چیف منسٹر آندھراپردیش کے میڈیا یونٹ کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق چندرابابو نائیڈو نے فاروق عبداللہ (نیشنل کانفرنس)، سدیپ بندھوپادھیائے (ترنمول کانگریس)، ڈی راجہ (سی پی آئی)، وی مائتریان (انا ڈی ایم کے)، انوپریہ پٹیل (اپنا دَل)، رام گوپال یادو (سماج وادی پارٹی) اور دیگر قائدین سے ملاقات کی۔ قبل ازیں تلگودیشم پارٹی کے رکن پارلیمنٹ ٹی جی وینکٹیش نے نریندر مودی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے آج صبح کہاکہ ’’پارلیمنٹ میں مختلف سرکردہ قائدین سے ملاقات کرتے ہوئے چیف منسٹر نائیڈو سارے ملک کو یہ پیغام دے رہے ہیں کہ صرف وعدے کرنا ہی نہیں بلکہ ان کا احترام کرنا بھی انتہائی اہم ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT