Monday , November 20 2017
Home / شہر کی خبریں / چندرا بابو نائیڈو عہدیداروں کے اشاروں پر حکومت چلا رہے ہیں

چندرا بابو نائیڈو عہدیداروں کے اشاروں پر حکومت چلا رہے ہیں

آندھرا پردیش پر بیوروکریٹس کی حکمرانی ، دیواکر ریڈی کاریمارک
حیدرآباد ۔ 20 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : مسٹر جے سی دیواکر ریڈی رکن پارلیمان تلگو دیشم پارٹی نے آج پھر ایکبار چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو کے تعلق سے سنسنی خیز ریمارکس کیے اور کہا کہ چیف منسٹر مسٹر چندرا بابو نائیڈو پھر ایکبار عہدیداروں کے اشاروں و مشوروں کے ذریعہ حکومت چلا رہے ہیں ۔ حقیقت تو یہ ہے کہ ریاست آندھرا پردیش میں عہدیداروں کی حکومت نہ چلانے سے متعلق میں نے ( دیواکر ریڈی نے ) چندرا بابو نائیڈو سے کہہ چکا ہوں ۔ لیکن اس پر انہوں نے کوئی مثبت ردعمل کا اظہار نہیں کیا ۔ بلکہ میری اس خواہش کو یکسر انہوں نے ( چندرا بابو نائیڈو ) نظر انداز کردیا ۔ مسٹر دیواکر ریڈی نے کہا کہ ریاست میں عہدیداروں کی حکمرانی چل رہی ہے اور عہدیداروں کی ایسی حکمرانی کی آندھرا پردیش کے عوام کو ہرگز پسند نہیں ہے ۔ لہذا انہوں نے مسٹر چندرا بابو نائیڈو سے متعدد مرتبہ کہہ چکے ہیں کہ وہ ( چندرا بابو نائیڈو ) اپنا طریقہ کار اور طرز عمل تبدیل کرلیں ۔ اگر مسٹر چندرا بابو نائیڈو اپنا طریقہ کار و طرز عمل تبدیل نہ کرلیں گے تو انہیں مشکل دہ حالات سے دوچار ہوں گے ۔ رکن پارلیمان مسٹر دیواکر ریڈی نے انتہائی سخت الفاظ میں کہا کہ سینئیر قائد تلگو دیشم پارٹی مسٹر پی کیشو کی پارٹی میں نہ ہی کوئی شناخت ہے اور نہ ہی کوئی اہمیت ہے تو ان جیسے ( دیواکر ریڈی جیسے ) افراد کی کیا حالت رہے گی ۔ ہر کوئی بخوبی سمجھ سکتے ہیں ۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ مسٹر چندرا بابو نائیڈو کی وجہ سے ہی تلگو دیشم پارٹی برسر اقتدار نہیں آئی اور کہا کہ بلانے کے ساتھ ہی عوامی آمد کے لیے مسٹر چندرا بابو نائیڈو گاندھی مہاتما نہیں ہیں اور نہ ہی ہوسکتے ہیں ۔ رکن پارلیمان تلگو دیشم پارٹی مسٹر دیواکر ریڈی نے بالواسطہ طور پر ان کی تلگو دیشم پارٹی میں شمولیت کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر وہ وائی ایس آر کانگریس پارٹی میں شامل رہتے تو آندھرا پردیش میں تلگو دیشم پارٹی کا برسر اقتدار آنا ہرگز ممکن نہیں تھا ۔ لیکن مسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی کو اقتدار سے روکنا ہی میرا اہم مقصد تھا جس کی وجہ سے بحالت مجبوری میں نے ( دیواکر ریڈی نے ) تلگو دیشم پارٹی میں شمولیت اختیار کی ۔ انہوں نے کہا کہ ان تمام باتوں اور حالات سے ایک عرصہ قبل ہی چیف منسٹر مسٹر چندرا بابو نائیڈو کو وہ واقف کرواچکے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT