Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / چندرا بابو نائیڈو پر ہر مسئلہ کو سیاسی رنگ دینے کا الزام

چندرا بابو نائیڈو پر ہر مسئلہ کو سیاسی رنگ دینے کا الزام

حکومت تلنگانہ اور چیف منسٹر پر آندھرائی وزراء کی تنقید پر این نرسمہا ریڈی کا شدید ردعمل

حکومت تلنگانہ اور چیف منسٹر پر آندھرائی وزراء کی تنقید پر این نرسمہا ریڈی کا شدید ردعمل
حیدرآباد ۔ 19 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز ) : وزیر داخلہ ریاست تلنگانہ مسٹر این نرسمہا ریڈی نے آندھرا پردیش کے بعض وزراء کی جانب سے چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے خلاف کئے جانے والے بعض غلط ریمارکس پر اپنے شدید ردعمل کا اظہار کیا اور غلط و بیجا الفاظ کے استعمال سے گریز کرنے کا مشورہ دیا اور اس رویہ کے خلاف سخت انتباہ دیا اور کہا کہ ایسے کوئی بھی وزراء نے آندھرا پردیش کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا ۔بلکہ یادگار سبق سکھایا جائے گا ۔ مسٹر این نرسمہا ریڈی نے آج یہاں سکریٹریٹ میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے حکومت آندھرا پردیش کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ ہماری خاموشی کو ہرگز کمزوری تصور نہ کریں بلکہ تلنگانہ چیف منسٹر یا تلنگانہ حکومت کے خلاف کسی بھی تنقید پر منہ توڑ جواب دینے سے ہماری تلنگانہ حکومت ہرگز گریز نہیں کرے گی ۔ انہوں نے چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو پر تلنگانہ حکومت کے ہر اقدام کو سیاسی رنگ دینے کا الزام عائد کیا اور کہا کہ مسٹر چندرا بابو نائیڈو کو چاہئے کہ ہر معمولی بات کو بتنگڑ نہ بنائیں بلکہ مسابقتی جذبہ کے ساتھ تلنگانہ ریاست کے ساتھ تعاون کرنے کی پر زور خواہش کی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ بیاس ندی سانحہ کے واقعہ پر بھی مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے سیاست کرنے کی کوشش کی اور اپنے وزراء کو روانہ کر کے مہلوکین کے افراد خاندان کے لیے ایکس گریشیا دینے کا اعلان کردیا ۔ لیکن حقیقت تو یہ ہے کہ چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے بیاس ندی سانحہ کے واقعہ پر اپنے گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے وزراء نے تلنگانہ بشمول انہیں ( ین نرسمہا ریڈی کو ) مقام واقعہ پر روانہ کر کے نعشوں کو تلاش کروایا ۔ جب کہ مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے جن وزراء کو بیاس ندی سانحہ کے سلسلہ میں روانہ کیا تھا وہ صرف اپنی سیر و تفریح کرتے ہوئے واپس ہوگئے ۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے مرکزی بی جے پی حکومت پر اپنے دباؤ کو برقرار رکھتے ہوئے ریاستی گورنر کو پولیس کے اختیارات تفویض کروانے کی کوشش کررہے ہیں ۔ علاوہ ازیں پولاورم پراجکٹس کے مسئلہ کو بھی سیاسی رنگ دیتے ہوئے ضلع کھمم کے ساتھ منڈلوں کو ریاست آندھرا پردیش میں ضم کروانے کی پوری کوشش کی ۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر چندر شیکھر راؤ انتخابات کے موقع پر عوام سے کئے ہوئے وعدوں کو پورا کرنے میں مصروف ہیں اور عوام سے جو بھی وعدے کئے تھے انہیں پورا کرنے کے اقدامات کررہے ہیں بالخصوص طلباء کی فیس ری ایمبرسمنٹ معاملہ میں بھی تلنگانہ طلباء کے سوا کسی اور کو فیس ری ایمبرسمنٹ نہ دینے کا واضح طور پر اعلان کیا ۔ انہوں نے چیف منسٹر آندھرا پردیش کو مشورہ دیا کہ وہ پڑوسی چیف منسٹر کی حیثیت سے دونوں ریاستوں کی ترقی کو یقینی بنانے میں آپسی تال میل کو برقرار رکھیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT