Monday , June 18 2018
Home / Top Stories / چندرا بابو نائیڈو کی نئے آندھرا پردیش کے پہلے چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف برداری

چندرا بابو نائیڈو کی نئے آندھرا پردیش کے پہلے چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف برداری

وجئے واڑہ 8 جون (شہاب الدین ہاشمی) تلگودیشم پارٹی کے صدر این چندرا بابو نائیڈو نے نئی ریاست آندھرا پردیش کے پہلے چیف منسٹر کی حیثیت سے آج یہاں ناگر جنا نگر میں حلف لیا۔ گورنر ای ایس ایل نرسمہن نے اس موقع کی نسبت سے مقررہ شُبھ مہورت کے مطابق شام 7:27 بجے چندرا بابو نائیڈو کو عہدہ اور رازداری کا حلف دلایا۔ متعدد مرکزی وزراء ، مختلف ریاستو

وجئے واڑہ 8 جون (شہاب الدین ہاشمی) تلگودیشم پارٹی کے صدر این چندرا بابو نائیڈو نے نئی ریاست آندھرا پردیش کے پہلے چیف منسٹر کی حیثیت سے آج یہاں ناگر جنا نگر میں حلف لیا۔ گورنر ای ایس ایل نرسمہن نے اس موقع کی نسبت سے مقررہ شُبھ مہورت کے مطابق شام 7:27 بجے چندرا بابو نائیڈو کو عہدہ اور رازداری کا حلف دلایا۔ متعدد مرکزی وزراء ، مختلف ریاستوں کے چیف منسٹر اور بی جے پی کے کئی سینئر قائدین نے تقریب حلف برداری میں شرکت کی۔ نائیڈو نے تلگو زبان میں خدا کے نام پر حلف لیا۔ ان کی حلف برداری کے دوران تلگودیشم پارٹی کے ہزاروں پر جوش کارکنوں نے زبردست نعرہ بازی کی۔ نائیڈو کے بعد 19 وزراء کو بھی حلف دلایا گیا۔ نائیڈو نے حلف برادری کیلئے سہ نشین پر پہنچنے سے قبل تلگو تلی کے مجسمہ پر حاضری دی۔ شدید گرمی اور چلچلاتی دھوپ کی لہر کے باوجود لاکھوں افراد نے آچاریہ ناگر جنا یونیورسٹی کے روبرو 70 ایکر پر محیط وسیع و عریض میدان پر جمع ہوکر بابو کی آمد کا انتظار کیا۔ مرکزی وزراء راجناتھ سنگھ ، ایم وینکیا نائیڈو ، اننت کمار ، کلراج مشرا ، پرکاش جاودیکر ، نرملا سیتا رامن اور دوسروںنے بھی شرکت کی۔ پنجاب کے چیف منسٹر پرکاش سنگھ بادل ان کے فرزند و ڈپٹی چیف منسٹر سکھبیر سنگھ بادل کے علاوہ گوا کے چیف منسٹر منوہر پاریکر، راجستھان کی چیف منسٹر وسندھرا راجے، چھتیس گڑھ کے رامن سنگھ ،ناگا لینڈ کے ٹی آر زیلنگ بھی سینئر بی جے پی قائدین ایل کے اڈوانی ، مرلی منوہر جوشی اور دوسروں کے ساتھ اس موقع پر موجود تھے ۔

راجیہ سبھا کے ڈپٹی چیر مین پی جے کورین ، بالی ووڈ اداکار ویویک اوبرائے ، تلگو فلمی اداکار پون کلیان ، این ٹی آر جونیر اور کلیان رام بھی وہاں موجود اہم شخصیات کے کہکشہاں میں شامل تھے۔علاوہ ازیں آرٹ آف لیونگ گروپ سری سری روی شنکر، بیاڈ منٹن اسٹار پولیلا گوپی چند ، سرکردہ صنعتکاروں جیسے جی ملکارجن راؤ ( جی ایم آر گروپ ) اور دیگر کئی اہم شخصیات شامل تھے۔ چندرا بابو نائیڈو کی شریک حیات بھونیشوری ،فرزند لوکیش ،بہو برہمنی اور دیگر رشتہ داروں نے بھی اس یادگار تقریب کا مشاہدہ کیا۔ چندرا بابو نائیڈو نے آج رات اپنی مجلس وزراء تشکیل دی۔ 19 وزراء میں تلگودیشم پارٹی کی حلیف بی جے پی کے دو ارکان بھی شامل کئے گئے ہیں۔ گورنر نے تمام 19 وزراء کو حلف دلایا۔ سینئر ارکان اسمبلی کے ای کرشنا مورتی، یانا ملا راما کرشنوڈو، ایانا پاتروڈو ،دیوینینی اوما مہیشور راو ، این چنا راجپا ، پلے رگھو ناتھ ریڈی، پٹی پاٹی پُلا راؤ اور بُجلا گوپالہ کرشنا ریڈی کو بھی نئی ریاست کی پہلی کابینہ میں شامل کرتے ہوئے تلگودیشم کے اچھے اور برے دنوں میں وفاداری نبھانے کا سلسلہ دیا گیا ہے ۔گنٹہ سرینواس راو کو بھی وزیر بنایا گیا ہے جو حال تک کرن کمار ریڈی کابینہ میں شامل تھے اور مستعفی ہونے کے بعد دوبارہ تلگودیشم میں واپس آگئے ۔ خاتون ارکان مقننہ پریتلا سنیتا، کمیڈی مرونانینی اور پیتھالہ سجاتا کو بھی مجلس وزراء میں جگہ مل گئی ہے ۔ ممتاز ماہر تعلیم پی نارائنا کو بھی بحیثیت وزیر حلف دلایا گیا

جو ریاستی اسمبلی یا کونسل کے رکن نہیں ہیں ۔ سمجھاتا ہے کہ انہیں بہت جلد کونسل کیلئے نامزد کیا جائے گا اور توقع ہے کہ نارائنا کو ڈپٹی چیف منسٹر بھی بنایا جاسکتا ہے جن کا تعلق کاپو طبقہ سے ہے۔ بی جے پی کے ارکان اسمبلی کامینینی سرینواس اور پی منکیالا راو کو بھی کابینی عہدہ حاصل ہوگیا ہے ۔ سابق مرکزی وزیر آنجہانی کے یرم نائیڈو کے چھوٹے بھائی اچھوتن نائیڈو کو بھی پہلی مرتبہ وزیر بنایا گیا ہے جو تین مرتبہ رکن اسمبلی منتخب ہوچکے ہیں۔ چندرا بابو نائیڈو کی مجلس وزراء میں اقلیتی طبقوں اور درجہ فہرست قبائیل کے کسی شخص کو وزیر نہیں بنایا گیا ہے کڑپہ کے سوائے تمام اضلاع کو کابینہ میں نمائندگی حاصل ہے ۔وائی رام کرشنوڈو اور کامینینی سرینواس نے انگریزی میں حلف لیا دیگر تمام نے تلگو میں حلف لیا ۔

TOPPOPULARRECENT