Thursday , May 24 2018
Home / شہر کی خبریں / چندرا بابو نے آندھراپردیش کے مفادات کو مرکزی حکومت کے پاس رہن رکھا

چندرا بابو نے آندھراپردیش کے مفادات کو مرکزی حکومت کے پاس رہن رکھا

چیف منسٹر نوٹ کے عوض ووٹ مقدمہ سے نجات پانے کوشاں ، رکن اسمبلی روجا کا ریمارک
حیدرآباد ۔ /18 فبروری (سیاست نیوز) وائی ایس آر کانگریس پارٹی نے ریاست آندھراپردیش میں برسراقتدار تلگودیشم پارٹی حکومت کی طرز کارکردگی پر اپنی شدید برہمی کا اظہار کیا اور الزام عائد کیا کہ محض نوٹ کے عوض ووٹ کیس ختم کروالینے کیلئے ہی چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے آندھراپردیش کے مفادات کو مرکزی حکومت کے ہاں رہن رکھے ہیں ۔ رکن اسمبلی و سینئر قائد وائی ایس آر کانگریس پارٹی روجا نے یہ بات کہی اور پرزور الفاظ میں بتایا کہ این چندرا بابو نائیڈو وزیراعظم مسٹرنریندر مودی کے ہاتھوں میں کٹھ پتلی بنے ہوئے ہیں ۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے روجا نے کہا کہ ریاست آندھراپردیش کیلئے خصوصی موقف کے مطالبہ پر وائی ایس آر کانگریس پارٹی ارکان پارلیمان کا لوک سبھا کی رکنیت سے استعفی دینے کا اعلان آج ملک بھر میں موضوع بحث بنا ہوا ہے اور کہا کہ اگر تلگودیشم پارٹی ارکان پارلیمان بھی لوک سبھا کی رکنیت سے مستعفی ہوں گے تو خود مرکزی حکومت کا موقف کمزورہوگا جس کی وجہ سے وہ ریاست کو خصوصی موقف فراہم کرنے کیلئے کوئی پیشرفت کرسکے گی ۔ رکن اسمبلی وائی ایس آر کانگریس پارٹی نے تلگودیشم حکومت پر الزام عائد کیا کہ جب کبھی کوئی مسئلہ پر کسی کی ضرورت محسوس ہوئی ہے مسٹر چندرابابو نائیڈو کسی نہ کسی اندازمیں مسٹر پون کلیان کو میدان میں اتاردیتے ہیں اور پردہ پر لاکر اصل مسئلہ سے عوام کی توجہ ہٹانے کے اقدامات کرنے کے عادی ہیں ۔ لہذا اب بھی مسئلہ کی سنگینی کو محسوس کرتے ہوئے مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے پون کلیان کو میدان میں اتارتے ہوئے اصل مسئلہ پر سے توجہ ہٹانے کی کوشش کررہے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT