Friday , November 17 2017
Home / شہر کی خبریں / چندرا بابو پر گروہی سیاست کو فروغ دینے کا الزام

چندرا بابو پر گروہی سیاست کو فروغ دینے کا الزام

نائیڈو سیاسی مفادات کیلئے اوچھی حرکتیں کر رہے ہیں ‘ جگن
کڑپہ 25 ڈسمبر ( آئی این این ) قائد اپوزیشن و وائی ایس آر کانگریس لیڈر جگن موہن ریڈی نے آج الزام عائد کیا کہ چیف منسٹر آندھرا پردیش چندرا بابو نائیڈو اور ان کی پارٹی کی جانب سے ضلع کڑپہ میں پرامن ماحول کو متاثر کرنے گروہی سیاست کو فروغ دیا جا رہا ہے۔ جگن موہن ریڈی نے کڑپہ ضلع میں ویمپلی منڈل کے وائی ایس آر کانگریس کے نائب صدر رامی ریڈی کے افراد خاندان سے ملاقات کی ۔ رامی ریڈی کو تلگودیشم ورکرس نے مبینہ طور پر قتل کردیا تھا ۔ بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے جگن موہن ریڈی نے تلگودیشم سربراہ پر شدید تنقید کی اور کہا کہ وہ علاقہ میں گروہی رقابتوں کو فروغ دیتے ہوئے اوچھی سیاست پر اتر آئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آنجہانی رامی ریڈی ایک ابھرتے ہوئے لیڈر تھے اور تلگودیشم پارٹی ایک سیاسی لیڈر کے طور پر انہیں قبول کرنے تیار نہیں تھی اسی لئے انہیں قتل کروادیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی گندی سیاست میں ملوث رہنے پر چندرا بابو نائیڈو کو شرم آنی چاہئے ۔ جگن نے حیرت ظاہر کی کہ نائیڈو سیاسی فائدہ کیلئے اس حد تک گر سکتے ہیں۔ صدر وائی ایس آر کانگریس نے کہا کہ تلگودیشم اپنے انتخابی وعدوں کی تکمیل میں ناکام ہوگئی ہے اور وہ ترقیاتی مسائل سے عوام کی توجہ ہٹانا چاہتی ہے اسی لئے اس طرح کی حرکتوں پر اتر آئی ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT