Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / چندرا بابو کے گمراہ کن وعدوں سے وائی ایس آر سی پی کو نقصان

چندرا بابو کے گمراہ کن وعدوں سے وائی ایس آر سی پی کو نقصان

اپوزیشن کا تعمیری رول ادا کرنے کا اعلان: صدر وائی ایس آر سی پی جگن موہن ریڈی

اپوزیشن کا تعمیری رول ادا کرنے کا اعلان: صدر وائی ایس آر سی پی جگن موہن ریڈی

حیدرآباد /16 مئی (سیاست نیوز) صدر وائی ایس آر کانگریس جگن موہن ریڈی نے کہاکہ ملک میں مودی کی لہر اور صدر تلگودیشم چندرا بابو نائیڈو کے گمراہ کن وعدوں سے سیما۔ آندھرا میں وائی ایس آر سی پی کو نقصان ہوا۔ نتائج منظر عام پر آنے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انھوں نے پارٹی کی شکست کو تسلیم کرتے ہوئے آئندہ پانچ سال بعد دوبارہ حکومت تشکیل دینے کی امید ظاہر کی۔ انھوں نے کہا کہ پانچ سال قبل جب انھوں نے پارٹی تشکیل دی تھی تو وہ اور ان کی والدہ لوک سبھا اور اسمبلی میں تنہا تھے، تاہم کچھ ہی عرصہ بعد وائی ایس آر کانگریس ارکان اسمبلی کی تعداد بڑھ کر 20 اور رکان لوک سبھا کی تعداد دو ہو گئی تھی، تاہم اب 70 اسمبلی اور 10 لوک سبھا حلقوں پر کامیابی کے امکانات ہیں۔ انھوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ سال کے دوران عوامی مسائل کو موضوع بناتے ہوئے وہ سب سے زیادہ عوام کے درمیان رہے، تاہم ملک میں مودی لہر اور چندرا بابو نائیڈو کے جھوٹے وعدوں نے عوام کو گمراہ کیا، لیکن وہ اس کی پرواہ نہ کرتے ہوئے مزید پانچ سال تک عوامی خدمات انجام دیں گے اور عوامی مسائل حکومت سے رجوع کرنے کے معاملے میں اپوزیشن کا تعمیری رول ادا کریں گے۔ انھوں نے کہا کہ وہ ہر مسئلہ پر عوام کے ساتھ دیانتداری سے کام کر رہے ہیں، جب کہ چندرا بابو نائیڈو نے کوئی رول ادا نہیں کیا، بلکہ بی جے پی سے اتحاد کیا اور جھوٹے وعدوں کے ذریعہ عوام کو گمراہ کیا۔ انھوں نے کہا کہ وائی ایس آر کانگریس تنہا تھی اور آئندہ بھی کسی سے اتحاد نہیں کرے گی۔ مستقبل کی حکمت عملی کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اب تک صدر کانگریس سونیا گاندھی سے مقابلہ تھا، اب وہ چندرا بابو نائیڈو سے مقابلہ کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT