Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / چند مٹھی بھر افراد 200 ملین عوام پر حکمرانی نہیں کرسکتے

چند مٹھی بھر افراد 200 ملین عوام پر حکمرانی نہیں کرسکتے

عدلیہ اور فوجی ادارہ پر سخت تنقید، نواز شریف کا بڑے جلسہ سے خطاب
لاہور۔/12اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان کے مزول وزیر اعظم نواز شریف نے اپنے ملک کی عدلیہ اور فوج کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے آج کہا کہ چند افراد کو 200 ملین عوام کے ملک پر حکمرانی کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ 67 سالہ نواز شریف نے مریدکے میں ایک بڑی ریلی میں شعلہ بیانی کے ساتھ خطاب کرتے ہوئے عوام سے سوال کیا کہ آیا ایک انقلاب لانے کیلئے وہ ان کی تائید کریں گے جو پاکستان کی تقدیر بدلنے کیلئے لانا چاہتے ہیں۔ نواز شریف نے پرجوش انداز میں شرکاء سے سوال کیا کہ ’’ ایک انقلاب لانے کیلئے آیا آپ نواز شریف کے ساتھ کھڑے ہوں گے؟ جس پر شرکاء نے ان کی بھرپور حمایت کرتے ہوئے ’’ جی ہاں ‘‘ کا نعرہ لگایا۔ نواز شریف نے عدلیہ اور فوجی ادارہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’’ یہ فیصلہ کرنے کا وقت آگیا ہے کہ اس ملک پر کس کی حکمرانی ہوگی۔ مٹھی بھر افراد 200 ملین عوام پر حکومت نہیں کرسکتے۔ پاکستان محض چند افراد کی جاگیر نہیںہے۔ ‘‘سپریم کورٹ نے پناما دستاویزات کے مقدمہ پر اپنے فیصلہ کے ذریعہ نواز شریف کو عوامی عہدہ کے لئے نااہل قرار دیا تھا جس کے بعد وہ عہدہ سے مستعفی ہوگئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ’’ ( مجھے بیدخل کرنے کا) فیصلہ آپ ( عوام ) نے نہیں کیا تھا۔ اگر نواز شریف کسی رشوت ستانی میں ملوث ہوتا تو آپ ( عوام ) خود مجھے عہدہ سے ہٹادیئے ہوتے ۔‘‘ نواز شریف اپنے خطاب کے دوران عدالت عظمیٰ کے پانچ ججوں کو سخت تنقید کا نشانہ بنارہے تھے جن کے فیصلہ کی بنیاد پر انہیں وزارت عظمیٰ اور حتیٰ کہ پارلیمانی نشست چھوڑنے کیلئے مجبور ہونا پڑا تھا۔ نواز شریف گذّتہ تین دن کے دوران جہلم، گجرات، کجرانوالہ ، راولپنڈی اور دیگر مقامات پر بڑی ریلیوں سے خطاب کرچکے ہیں، جہاں عوام کی کثیر تعداد نے ان کا پرتپاک استقبال کیا اور جلسوں میں شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT