Saturday , September 22 2018
Home / سیاسیات / چھتیس امیدواروں پر سنگین فوجداری الزامات

چھتیس امیدواروں پر سنگین فوجداری الزامات

نئی دہلی ۔ 19 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آنے والے لوک سبھا انتخابات میں 280 امیدوار کانگریس اور بی جے پی کے ٹکٹ پر مقابلہ کریں گے ۔ ان میں سے 84 کے خلاف فوجداری مقدمات کا اعلان کیا جاچکا ہے جبکہ 36 امیدواروں کو سنگین مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے الزامات کا سامنا ہے ۔ ان پر قتل اور اغواء جیسے الزامات ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 469 امیدوار

نئی دہلی ۔ 19 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آنے والے لوک سبھا انتخابات میں 280 امیدوار کانگریس اور بی جے پی کے ٹکٹ پر مقابلہ کریں گے ۔ ان میں سے 84 کے خلاف فوجداری مقدمات کا اعلان کیا جاچکا ہے جبکہ 36 امیدواروں کو سنگین مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے الزامات کا سامنا ہے ۔ ان پر قتل اور اغواء جیسے الزامات ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 469 امیدواروں کے منجملہ 280 امیدواروں کا 13 مارچ تک کانگریس اور بی جے پی نے اعلان کیا ہے ۔ مزید 161 امیدواروں کا اعلان باقی ہے۔ ان میں سے 58 فیصد امیدوار کروڑپتی ہیں جن کے اوسط اثاثے 4.86 کروڑ روپئے کے ہیں۔

این ایل سی ورکر کی ہلاکت پر جیہ للیتا کا اظہار تعزیت
چینائی ۔ 19 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) دو روز قبل نیو پولی لگنائیٹ کارپوریشن (NLC) کے ایک ورکر کی موت پر وزیر اعلیٰ ٹاملناڈو جیہ للیتا نے اظہار تعزیت کیا ہے ۔ سی آئی ایس ایف جوانوں نے خود حفاظتی اقدامات کے طور پر ورکر پر مبینہ طور پر فائرنگ کردی تھی ۔ ایک بیان جاری کرتے ہوئے جیہ للیتا نے کہا کہ وہ مہلوک ورکر کے ارکان خاندان کے ساتھ اظہار تعزیت کرتی ہیں اور حکومت و عوام کی تمام تر ہمدردیاں ان کے ساتھ ہیں۔ 31 سالہ این ایل سی ورکر اس وقت ہلاک ہوگیا جب سیکوریٹی ڈیوٹی انجام دینے والے سی آئی ایس ایف نے اس وقت فائرنگ کردی تھی جب اس پر راجہ اور اس کے دوست کو ایک مکان میں بلا اختیار داخل ہونے کیلئے کانسٹبل نے روک دیا تھا جس پر کانسٹبل پر حملہ کردیا گیا تھا ۔ اپنے بچاو کیلئے کانسٹبل نے فائرنگ کردی تھی ۔ کانسٹبل کو بعد ازاں گرفتار کرلیا گیا ۔ اس واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے این ایل سی کے ورکرس نے بطور احتجاج ایک روزہ ہڑتال کا بھی اعلان کیا۔

TOPPOPULARRECENT