Thursday , January 18 2018
Home / Top Stories / چھتیس گڑھ میں تقریباً 500 دیہاتیوں کو نکسلائیٹس نے یرغمال بنالیا

چھتیس گڑھ میں تقریباً 500 دیہاتیوں کو نکسلائیٹس نے یرغمال بنالیا

رائے پور ،9 مئی (سیاست ڈاٹ کام) نکسلائیٹس نے وزیراعظم نریندر مودی کے دورہ سے عین قبل تقریباً 500 دیہاتیوں کو یرغمال بنالیا کیونکہ وہ چھتیس گڑھ کے ضلع سکما میں واقع تونگپال علاقہ میں برج کی تعمیر کو مقامی عوام کی حمایت پر شدید برہم تھے۔ تقریباً تین دہوں میں ماؤسٹوں کے مرکز کا دورہ کرنے والے مودی پہلے وزیراعظم ہیں۔ انھوں نے نکسلائیٹس س

رائے پور ،9 مئی (سیاست ڈاٹ کام) نکسلائیٹس نے وزیراعظم نریندر مودی کے دورہ سے عین قبل تقریباً 500 دیہاتیوں کو یرغمال بنالیا کیونکہ وہ چھتیس گڑھ کے ضلع سکما میں واقع تونگپال علاقہ میں برج کی تعمیر کو مقامی عوام کی حمایت پر شدید برہم تھے۔ تقریباً تین دہوں میں ماؤسٹوں کے مرکز کا دورہ کرنے والے مودی پہلے وزیراعظم ہیں۔ انھوں نے نکسلائیٹس سے تشدد ترک کرکے امن کا موقع فراہم کرنے کی خواہش کی تاکہ اموات کا یہ ڈرامہ ختم ہو اور ترقی کیلئے راہ ہموار ہوسکے ۔ اپنے مختصر دورہ کے موقع پر مودی نے ماؤسٹوں کا مرکز سمجھے جانے والے علاقہ بَستر میں 24 ہزار کروڑ روپئے مالیتی بہبودی اسکیم کا آغاز کیا ۔ ان میں الٹرا میگا اسٹیل پلانٹ کا قیام، ریلوے لائن، پائپ لائن اور دیگر پراجکٹس شامل ہیں۔ مودی نے کہاکہ کندھوں پر بندوق نہیں صرف کدال کے ذریعے ہی ترقی ہوسکتی ہے ۔ اس طرح ہر ایک کو قومی دھارے میں لایا جاسکتا ہے ۔ انھوں نے کہاکہ تشدد کا کوئی مستقبل نہیں، صرف پُرامن طریقے سے ہی ترقی کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔

مودی نے کہا کہ نکسلائیٹس تحریک کے شروعاتی مقام پر تشدد کی راہ ترک کردی گئی ہے ۔ آپ مایوس نہ ہوں اور موت کے خوف کا یہ ڈرامہ ختم ہوگا ۔قبائلی بستر علاقہ میں دنتے واڑہ معدنی وسائل بالخصوص فولاد سے مالا مال ہے ۔ ماضی میں اس علاقہ میں نکسلائیٹس کے حملوں کے کئی واقعات پیش آئے اور 2010 ء میں ماؤسٹوں کا بدترین حملہ ہوا جس میں 76 سکیورٹی ارکان ہلاک ہوگئے تھے۔ چھتیس گڑھ کے ضلع سکما میں اب یرغمال کا تازہ واقعہ پیش آیا ۔ سکما کے ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ہریش راتھوڑ نے بتایا کہ مسلح کیڈر کی کثیرتعداد کل رات مرینگا اور متصلہ دیہاتوں میں گھس آئی

اور تقریباً 400 تا 500 دیہاتیوں کو وہ اپنے ساتھ لے گئے ۔ ماؤ نواز دراصل رینگا گاؤں میں مقامی ندی پر برج کی تعمیر کے سخت خلاف ہیں۔ یہاں ترقیاتی کاموں کو مقامی عوام کی تائید پر بھی وہ برہم ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ انھوں نے مقامی دیہاتیوں کو یرغمال بنالیا ۔ ان میں چند ورکرس بھی شامل ہیں جو برج کی تعمیر سے وابستہ رہے ہیں۔ یرغمال بنائے جانے کی اطلاع ملتے ہی سکیورٹی عملہ کو متحرک کردیا گیا اور تونگ پال کے گھنے جنگلاتی علاقہ میں تلاشی مہم شروع کردی گئی ہے ۔ اس اغوا ڈرامہ کے تعلق سے اس وقت اُلجھن پیدا ہوگئی جب چیف منسٹر رمن سنگھ نے کہا کہ نکسلائیٹس نے کل رات 200تا 250 دیہاتیوں کا اغوا کیا اور مقامی انتظامیہ ان کی بحفاظت رہائی کو یقینی بنانے کی کوشش جاری رکھے ہوئے ہے ۔ انھوں نے کہاکہ یرغمال بنائے جانے کے بارے میں کوئی الجھن نہیں ہے ۔ مقامی انتظامیہ ان کی رہائی کیلئے سرگرم ہے ۔

مغویہ دیہاتیوں کی رہائی، صرف ایک کی زدوکوبی سے موت
رائے پور سے رات دیر گئے موصولہ اطلاع کے مطابق ماؤنوازوں نے چھتیس گڑھ کے ضلع سکما سے 250 دیہاتیوں کا اغوا پڑوسی دنتے واڑہ کو وزیراعظم نریندر مودی کے دورے سے چند گھنٹے قبل کیا تھا لیکن رات گئے تمام مغویہ افراد کو ماسوائے ایک رہا کردیا ، جسے ’’عوام کی عدالت‘‘ میں مقدمہ بازی کے بعد زدوکوبی کے ذریعے موت کی نیند سلا دیا گیا۔ سکما کے سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ڈی شراون نے کہا کہ نکسلائیٹس نے ایک دیہاتی سدرام ناگ کو نام نہاد ’جن عدالت‘ منعقد کرتے ہوئے ہلاک کردیا گیا۔ یہ کارروائی تونگپال پولیس اسٹیشن حدود کے تحت گادم اور مونگا دیہاتوں کے درمیان واقع جنگلات میں ہوئی۔ بعدازاں دیگر تمام رہا کردیئے گئے۔ شراون نے نیوز ایجنسی ’پی ٹی آئی‘ کو فون پر بتایا کہ موصولہ اطلاع کے مطابق رہاشدہ دیہاتی اپنے گھروں کو واپس ہورہے ہیں، جن کے ساتھ سدرام ناگ کی نعش ہے۔ باغی ماؤنوازوں نے تمام مغویہ افراد کو قریبی جنگل میں رکھا تھا۔

TOPPOPULARRECENT