Wednesday , September 26 2018
Home / Top Stories / چھتیس گڑھ میں نکسلائٹس حملے، 14 ہلاک

چھتیس گڑھ میں نکسلائٹس حملے، 14 ہلاک

رائے پور 12 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نکسلائٹس سرگرمیوں سے متاثرہ ریاست چھتیس گڑھ کے جنوبی اضلاع بیجاپور اور بَستر میں آج ایک گھنٹہ سے بھی کم وقفہ میں نکسلائٹوں کی جانب سے ایک بس اور ایک ایمبولنس کو دھماکہ سے اُڑا دیئے جانے کے نتیجہ میں کم سے کم 14 افراد ہلاک ہوگئے ہیں جن میں پولنگ عملہ کے 7 ارکان اور سی آر پی ایف کے 5 جوان شامل ہیں۔ ان دون

رائے پور 12 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نکسلائٹس سرگرمیوں سے متاثرہ ریاست چھتیس گڑھ کے جنوبی اضلاع بیجاپور اور بَستر میں آج ایک گھنٹہ سے بھی کم وقفہ میں نکسلائٹوں کی جانب سے ایک بس اور ایک ایمبولنس کو دھماکہ سے اُڑا دیئے جانے کے نتیجہ میں کم سے کم 14 افراد ہلاک ہوگئے ہیں جن میں پولنگ عملہ کے 7 ارکان اور سی آر پی ایف کے 5 جوان شامل ہیں۔ ان دونوں واقعات میں بشمول 5نیم فوجی جوان، 11 افراد زخمی بھی ہوئے۔ ایڈیشنل ڈائرکٹر جنرل پولیس (نکسل آپریشنس) آر کے وِج نے نیوز ایجنسی ’پی ٹی آئی‘ سے کہاکہ بیجاپور کے کیٹلنار گاؤں کے قریب 11 بجے دن پولنگ عملہ پر نکسلائٹس نے حملہ کیا جب وہ اس علاقہ میں ڈیوٹی انجام دینے کے بعد واپس ہورہے تھے۔ نکسلائٹ سرگرمیوں سے متاثر حلقہ بستر میں 10 اپریل کو رائے دہی ہوئی تھی۔ نکسلائٹوں نے زمینی سرنگ دھماکہ کردیا اور

اندھا دھند فائرنگ بھی کی۔ پولیس افسر نے مزید کہاکہ پولنگ عملہ کے چھ ارکان برسر موقع ہلاک ہوگئے اور ساتواں ایک مقامی ہاسپٹل میں زخموں سے جانبر نہ ہوسکا۔ اُنھوں نے کہاکہ نعشیں ہنوز جنگلات سے نہیں نکالی گئی ہیں۔ سکیورٹی فورسیس کی طرف سے جوابی حملہ کے آغاز کے بعد مسلح باغی گھنے جنگلات میں فرار ہوگئے۔ نکسلائٹس نے ایک گھنٹہ سے بھی کم وقفہ میں دربھا پولیس اسٹیشن حدود میں سی آر پی ایف عملہ کو لیجانے والی ایک ایمبولنس کو دھماکہ سے اُڑادیا۔ 108 سنجیونی ایمبولینس میں سی آر پی ایف کے تقریباً 10 جوان سفر کررہے تھے کہ موضع کماران میں یہ حملہ کیا گیا تھا۔ اس واقعہ میں سی آر پی ایف کے پانچ اہلکار اور ایمبولنس ڈرائیور ہلاک ہوگیا۔ علاوہ ازیں پانچ نیم فوجی اہلکار اور نیم طبی اسٹاف کا ایک کارکن زخمی ہوئے ہیں۔
ایک سینئر پولیس عہدیدار کے مطابق سی آر پی ایف کی 80 ویں بٹالین سے ان کا تعلق تھا اور وہ اس علاقہ میں ایک سکیورٹی مہم کے بعد ضلع جگدلپور کمانار سے پہلے ایمبولنس میں لفٹ مانگی تھی۔

TOPPOPULARRECENT