Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / چھ خادم الحجاج کے خلاف تادیبی کارروائی ، خرچ وصول کرنے کی سفارش

چھ خادم الحجاج کے خلاف تادیبی کارروائی ، خرچ وصول کرنے کی سفارش

حج کمیٹی سے ربط نہ رکھنے اور عازمین کی خدمات میں پہلوتہی پر کارروائی ، متعلقہ محکمہ جات کو اطلاعات ارسال
حیدرآباد ۔ 19۔ اکتوبر (سیاست نیوز) تلنگانہ حج کمیٹی نے 6 خادم الحجاج کے خلاف تادیبی کارروائی کا فیصلہ کیا ہے جن میں اب تک 5 خادم الحجاج کل تک حیدرآباد واپس ہوئے جبکہ چھٹویں خادم الحجاج کی کل منگل کے دن واپسی ہوگی ۔ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں فرائض کی تکمیل میں ناکامی اور جان بوجھ کو غفلت سے کام لینے کیلئے ان حجاج کرام کے خلاف تادیبی کارروائی کا فیصلہ کیا گیا۔ تمام 6 خادم الحجاج کے خلاف حجاج کرام نے کئی شکایات کی تھیں۔ اسپیشل آفیسر پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ مذکورہ 6 خادم الحجاج نے بیمار حجاج کرام کی عیادت تک نہیں کی اور نہ ہی انہیں ہاسپٹل لیجانے کا انتظام کیا ۔ وہ حج کمیٹی سے بھی ربط میں نہیں رہے ۔ اب تک جن پانچ خادم الحجاج کے خلاف کارروائی کو قطعیت دیدی گئی ، ان میں شیخ محمد غیاث  (گنٹور) ، سید حسام الدین قادری (ظہیر آباد ، میدک) ، محمد عبدالفہیم (کریم نگر) ، محمد ایوب خاں (کڑپہ) اور  عبدالقدوس (کڑپہ) شامل ہیں جبکہ پی تاج الدین بابا (چتور) ، کل منگل کے دن بنگلور واپس ہوں گے ۔ ان کے محکمہ جات کو رپورٹ روانہ کرتے ہوئے ان کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی اور  دوبارہ خادم الحجاج کیلئے درخواستیں روانہ کرنے سے گریز کرنے کی خواہش کی گئی ہے ۔ اسی دوران سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے فرائض میں غفلت برتنے والے خادم الحجاج کے خلاف کارروائی کی تائید کی اور تادیبی کارروائی کے علاوہ ان سے حج پر خرچ کی گئی رقم وصول کرنے کی سفارش کی ۔ حج کمیٹی سے جملہ 18 خادم الحجاج روانہ ہوئے تھے ، جن میں تلنگانہ کے 11 اور آندھراپردیش کے 7 خادم شامل ہیں۔ حج کمیٹی کے تین عہدیدار بھی خادم الحجاج کے طور پر روانہ ہوئے تھے ۔ اسپیشل آفیسر نے بتایا کہ حجاج کرام کی واپسی کے بعد بھی اگر کسی خادم الحجاج کے بارے میں شکایات ملتی ہیں تو اس کے خلاف بھی کارروائی کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT