Friday , July 20 2018
Home / Top Stories / چہارشنبہ کو مکمل چاند گہن ’’سوپر مون‘‘

چہارشنبہ کو مکمل چاند گہن ’’سوپر مون‘‘

۔150 سال بعد فلکیات کا اہم نادر موقع ، دنیا بھر میں دلکش نظارہ کی تیاریاں
میامی / نینی تال ۔ /28 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) بلیو مون ، بلڈ مون اور ایک سوپر مون کا /31 جنوری 2018 ء کو نظارہ کیا جائے گا ۔ یہ مکمل چاند گہن مغربی شمالی امریکہ، ایشیاء ، مشرق وسطی، روس اور آسٹریلیا میں وقوع ہوگا ۔ /31 جنوری کو ہونے والے مکمل چاند گہن کو تین غیر معمولی خصوصیات سے جانا جارہا ہے ۔ یہ چاند اضافی حجم کے ساتھ بڑا سوپر مون ہوگا ۔ اسکائی اینڈ ٹیلی اکسوپ میگزین کے سینئر ایڈیٹر کیلے بانٹے نے کہا کہ یہ ایک اجرام فلکی کا نادر موقع ہوگا ۔ اس طرح کا نظارہ گزشتہ 151 سال میں نظر نہیں آیا ۔ چاند گہن کے آدھی رات کو لگے گا ۔ بحراوقیانوس اس وقت چاند کی سمت ہوگا ۔ وسطی اور مشرقی ایشاء ، انڈونیشیا ، نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے زیادہ تر حصوں میں چاند کا دلکش نظارہ دیکھا جاسکتا ہے ۔ ہندوستان کے شہر نینی تال میں چاند گہن کا نظارہ کرنے والوں کا سب سے بڑا اجتماع دیکھا جائے گا ۔ آریہ بھٹ ریسرچ انسٹی ٹیوٹ آف آبزرویشنل سائینس کے لئے بھی یہ موقع غیرمعمولی اہم ہے ۔ انسٹی ٹیوٹ کے ڈائرکٹر ڈاکٹر انیل پانڈے نے کہا کہ /31 جنوری کو چاند کرہ ارض کے قریب تر ہوجائے گا ۔ جس دوران چاند کا حجم تقریباً 7فیصد بڑا ہوگا ۔ یہ سب سے زیادہ روشن اور بڑا بھی دکھائی دے گا ۔ نینی تال کا آسمان زیادہ صاف رہے گا ۔ یہاں سے گہن کا واضح نظارہ ہوسکے گا ۔ اس لئے یہاں چاند گہن کا نظارہ کرنے کے خواہشمندوں کی بڑی تعداد جمع ہورہی ہے ۔ مغربی ایشیاء ، برصغیر ہند۔پاک ، مشرق وسطی اور مشرقی یوروپ میں چاند طلوع ہوگا تو گرہن شروع ہوچکا ہوگا ۔ الاسکا ، ہوائی ، اور شمالی مغربی کناڈا میں یہ گرہن شروع سے آخر تک دیکھا جاسکتا ہے ۔ اس سال کے بعد آئندہ چاند گہن /31 ڈسمبر 2028 ء کو ہوگا اور اس کے بعد 2037 کو ہوگا ۔ یہ دونوں گہن مکمل ہوں گے ۔ سورج گہن کو سادہ آنکھ سے دیکھا نہیں جاسکتا لیکن اس چاند گہن کو آنکھوں پر کوئی محفوظ شئے لگائے بغیر آسانی کے ساتھ سادہ آنکھ سے دیکھا جاسکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT