Friday , December 15 2017
Home / جرائم و حادثات / چیف منسٹر آفس میں کنٹراکٹ فراہم کرنے کا دھوکہ

چیف منسٹر آفس میں کنٹراکٹ فراہم کرنے کا دھوکہ

سی سی ایس پولیس نے شاطر دھوکہ باز کو گرفتار کرلیا
حیدرآباد۔ 24 اکتوبر (سیاست نیوز) سی سی ایس پولیس نے ایک شاطر دھوکہ باز کو گرفتار کرلیا جس نے چیف منسٹر تلنگانہ کے دفتر میں ایرکنڈشنرس کی فروخت کرنے کا کنٹراکٹ فراہم کرنے تاجرین کو دھوکہ دے رہا تھا۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ڈیٹکٹیو ڈپارٹمنٹ مسٹر اویناش موہنتی نے بتایا کہ 12 اکتوبر کو شری پون اینڈ شاپی واقع کاچی گوڑہ کے الیکٹرانکس ڈیلر پون کمار ریڈی نے سی سی ایس پولیس میں ایک شکایت درج کرواتے ہوئے کہا کہ اسے چیف منسٹر تلنگانہ کے دفتر سے ایک شخص کا فون کال موصول ہوا جس نے خود کی شناخت راکیش کی حیثیت سے کرائی اور دعویٰ کیا کہ چیف منسٹر کے دفتر میں ایرکنڈشنرس کی تنصیب کا کنٹراکٹ ہے اور اس کے لئے 17,000 روپئے نقد رقم بطورِ پیشگی اکاؤنٹ میں آن لائن منتقل کرنے کیلئے کہا۔ رقم حوالے کرنے کے باوجود بھی کنٹراکٹ سے متعلق کوئی اطلاع موصول نہ ہونے پر سی سی ایس پولیس کی سائبر کرائم ٹیم سے شکایت درج کرائی اور اس ضمن میں مقدمہ درج کروایا۔ مسٹر موہنتی نے کہا کہ تیکنیکی تحقیقات کی اساس پر ان کی ٹیم نے کھمم کے متوطن 28 این راکیش کو گرفتار کرلیا جس نے سوشیل میڈیا پر خود کا ایک آئی ڈی ’’سی ایم آفس راکیش‘‘ بنایا اور اس کی آڑ میں وہ الیکٹرانکس کے ڈیلرس کو دھوکہ دینے لگا۔ انہوں نے کہا کہ یہ شاطر دھوکہ باز فی ڈیلر سے 10,000 تا 25,000 روپئے کنٹراکٹ دلانے کے بہانے ہڑپ لیا کرتا تھا۔ گرفتار دھوکہ باز راکیش کو عدالت میں پیش کرنے کے بعد جیل منتقل کردیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT