Thursday , January 18 2018
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر اور گورنر کے درمیان ایکبار پھر سرد جنگ

چیف منسٹر اور گورنر کے درمیان ایکبار پھر سرد جنگ

حیدرآباد ۔ 17 ۔ فروری : ( سیاست نیوز) : چیف منسٹر کرن کمار ریڈی اور گورنر نرسمہن کے درمیان پھر ایکبار سرد جنگ شروع ہوگئی ہے ۔ گورنر کوٹہ کے 4 ایم ایل سی کے انتخاب کے لیے چیف منسٹر نے 4 ناموں کی سفارش کی ہے ۔ تاہم گورنر نے تین ناموں کو منظوری دی ہے اور رگھورام ریڈی کی سفارش کو خارج کردیا ہے ۔ تلنگانہ کے مسئلہ پر چیف منسٹر اور کانگریس ہائی کم

حیدرآباد ۔ 17 ۔ فروری : ( سیاست نیوز) : چیف منسٹر کرن کمار ریڈی اور گورنر نرسمہن کے درمیان پھر ایکبار سرد جنگ شروع ہوگئی ہے ۔ گورنر کوٹہ کے 4 ایم ایل سی کے انتخاب کے لیے چیف منسٹر نے 4 ناموں کی سفارش کی ہے ۔ تاہم گورنر نے تین ناموں کو منظوری دی ہے اور رگھورام ریڈی کی سفارش کو خارج کردیا ہے ۔ تلنگانہ کے مسئلہ پر چیف منسٹر اور کانگریس ہائی کمان کے درمیان اختلافات پیدا ہوگئے ہیں اور یہ بھی افواہیں گشت کررہے ہیں ۔ چیف منسٹر مستعفی ہوجائیں گے ۔ آندھرا پردیش قانون ساز کونسل کے لیے گورنر کوٹہ سے چار ارکان کا انتخاب ہونا ہے ۔ یہ نام کافی عرصے سے زیر التواء ہیں حالیہ راجیہ سبھا کے انتخابات میں اپنی میعاد مکمل کرنے والے ایس سی طبقہ کے نندی ایلیا اور ایس ٹی طبقہ کی قانون امیدوار رتنا بائی کو دوبارہ امیدوار نا بنانے پر کانگریس کے ایس سی ، ایس ٹی طبقات کے وزراء اور ارکان اسمبلی نے سخت ناراضگی کا اظہار کیا تھا اور کانگریس کے امیدواروں کو ووٹ نہ دینے کی دھمکی دی تھی ۔

جس پر صدر پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر بی ستیہ نارائنا اور دوسرے قائدین نے ہائی کمان سے ٹیلی فون پر بات چیت کی اور گورنر کوٹہ کے ایم ایل سی زمرے میں انہیں موقع فراہم کرنے کا تیقن دیا تھا ۔ جس پر پسماندہ طبقات کی ناراضگی دور ہوئی تھی ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ کانگریس ہائی کمان نے 4 کے منجملہ صرف تین ، نندی ایلیا ، رتنا بائی اور صدر پردیش کانگریس تادیبی کمیٹی مسٹر کے ستیہ نارائنا کو منظوری دیتے ہوئے فہرست روانہ کی تھی تاہم چیف منسٹر کرن کمار ریڈی نے ان تینوں ناموں کے ساتھ اپنے کٹر حامی مسٹر راگھو رام ریڈی کے نام کو فہرست میں شامل کرتے ہوئے گورنر کو سفارش کردی تھی ۔ لیکن گورنر نے تینوں ناموں کو منظوری دی ہے اور راگھورام ریڈی کے نام کو خارج کردیا ہے ۔ واضح رہے کہ تقریبا 2 سال قبل آر ٹی آئی کمشنرس کے تقرر کے معاملے میں بھی چیف منسٹر اور گورنر کے درمیان اختلافات پیدا ہوگئے تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT