Wednesday , December 19 2018

چیف منسٹر بہار جتن رام مانجھی یکسر نظر انداز

پٹنہ 9 فبروری (سیاست ڈاٹ کام)سابق چیف سکریٹری اشوک کمار سنگھ نے آج چیف انفارمیشن کمشنر بہار کی حیثیت سے حلف لیا۔ اس موقع پر حکمران جنتادل متحدہ قائدین میں داخلی لڑائی جھگڑے دیکھے گئے ۔ راج بھون میں منعقدہ ایک تقریب گورنر کیسری ناتھ ترپاٹھی نے اشوک کمار سنگھ کو عہدہ کا حلف دلوایا ۔ اس تقریب میں چیف منسٹر جتن رام مانجھی‘اسپیکر ادوے ن

پٹنہ 9 فبروری (سیاست ڈاٹ کام)سابق چیف سکریٹری اشوک کمار سنگھ نے آج چیف انفارمیشن کمشنر بہار کی حیثیت سے حلف لیا۔ اس موقع پر حکمران جنتادل متحدہ قائدین میں داخلی لڑائی جھگڑے دیکھے گئے ۔ راج بھون میں منعقدہ ایک تقریب گورنر کیسری ناتھ ترپاٹھی نے اشوک کمار سنگھ کو عہدہ کا حلف دلوایا ۔ اس تقریب میں چیف منسٹر جتن رام مانجھی‘اسپیکر ادوے نارائن چودھری‘ ڈپٹی اسپیکر امریندر پرتاپ سنگھ وزیر زراعت نریندر سنگھ اور وزیر دیہی ترقیات ستیش مصرا شریک تھے ۔ دریں اثناء جنتادل متحدہ کے قائدین رام مانجھی اور ستیش کمار کے حامیوں میں اس وقت شدید اختلافات دیکھے گئے جب اسپیکر اسمبلی نے مانجھی سے مصافحہ نہیں کیا ۔ چیف منسٹر اپنی نشست پر بیٹھنے سے قبل مصافحہ کیلئے ہاتھ آگے بڑھایا تھا۔ اسی تقریب میں چیف منسٹر بالکل سامنے پہلی قطار میں بیٹھے ہوئے تھے اور اسی قطار میں تیسری نشست پر اسپیکر براجمان تھے اور درمیان کی نشست کو خالی چھوڑ دیا گیا ۔ 5 منٹ کی تقریب کے درمیان چیف منسٹر اور اسپیکر ایک دوسرے کو دیکھنا تک گوارہ نہیں کیا ۔ تقریب گاہ سے جاتے وقت بھی اسپیکر نے چیف منسٹر کو نظر انداز کردیا اور بازو کے ہال میں چلے گئے جہاں پر مہمانوں کیلئے چائے پانی کا انتظام کیا گیا تھا ۔ واضح رہے کہ اسپیکر نے کل جنتادل متحدہ مقننہ پارٹی لیڈر کی حیثیت سے ستیش کمار کو تسلیم کرلیا اور بیدخل چیف منسٹر کی دعویدار کو مسترد کردی۔ مانجھی کو حکمراں جماعت سے کل ہی خارج کردیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT