Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر تلنگانہ کا دورۂ چین و ہانگ کانگ فلاپ شو

چیف منسٹر تلنگانہ کا دورۂ چین و ہانگ کانگ فلاپ شو

سرمایہ کاری پر وہائٹ پیپر جاری کرنے کا مطالبہ، محمد علی شبیر کا بیان
حیدرآباد /17 ستمبر (سیاست نیوز) قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے چیف منسٹر کے دورۂ چین و ہانگ کانگ کو فلاپ شو قرار دیتے ہوئے تلنگانہ میں ہونے والی سرمایہ کاری پر وہائٹ پیپر جاری کرنے کا حکومت سے مطالبہ کیا۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر اور ان کی ٹیم کے دورہ چین کو سیر و تفریح قرار دیتے ہوئے کہا کہ چین اور ہانگ کانگ میں تلنگانہ کے اس وفد نے کسی بھی صنعت یا ادارہ سے کوئی معاہدہ نہیں کیا، جب کہ چیف منسٹر کروڑہا روپئے کی سرمایہ کاری کا جھوٹا دعویٰ کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ قبل ازیں چیف منسٹر نے ملیشیا اور سنگاپور کا دورہ کرتے ہوئے ریاست میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کا ادعا کیا تھا، مگر اب تک ان دونوں ممالک نے تلنگانہ میں کسی طرح کی سرمایہ کاری نہیں کی۔ انھوں نے کہا کہ چیف منسٹر اور ان کی ٹیم کے دورہ چین پر یومیہ 50 لاکھ روپئے خرچ ہوئے، جب کہ ریاست میں ہر تین گھنٹے میں ایک کسان خودکشی کر رہا ہے۔ متاثرین کو معاوضہ ادا کرنے کی بجائے عوامی فنڈ کے کروڑہا روپئے سیر و تفریح پر خرچ کئے جا رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت تلنگانہ میں سرمایہ کاری کے لئے سنجیدہ نہیں ہے، اس کے باوجود بہترین صنعتی پالیسی کا ادعا کیا جا رہا ہے۔ اگر عمدہ صنعتی پالیسی ہوتی تو عالمی بینک سرمایہ کاری کے لئے ریاست کو 13 واں مقام کیوں دیتا۔ انھوں نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ سرمایہ کاروں کے لئے سرخ قالین استعمال کر رہے ہیں، مگر وہ تلنگانہ میں سرمایہ کاری کے لئے دلچسپی نہیں دکھا رہے ہیں، جب کہ چھ صنعتوں کے لئے برقی سبسیڈی، ویاٹ سبسیڈی اور دیگر رعایتیں گزشتہ جون سے اب تک جاری کی گئی ہیں۔ انھوں نے فاضل بجٹ رکھنے والی ریاست تلنگانہ کو خسارہ بجٹ میں تبدیل کرنے کا تلنگانہ حکومت پر الزام عائد کیا اور صرف ڈیڑھ سال میں 63 ہزار کروڑ روپئے قرض حاصل کرنے کا ادعا کیا۔

TOPPOPULARRECENT