Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر ، اردو دوست : محمد محمود علی

چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر ، اردو دوست : محمد محمود علی

اردوکے فروغ کی اسکیمات پر عمل درآمد ، نمائش میں اردو اکیڈیمی کے اسٹال کا افتتاح
حیدرآباد۔ 12 جنوری (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے آج کل ہند صنعتی نمائش میں اردو اکیڈیمی اور اقلیتی اقامتی اسکول سوسائٹی کے اسٹالس کا افتتاح انجام دیا۔ انہوں نے اردو اکیڈیمی کے کیلنڈر کی رسم اجراء انجام دی۔ اس موقع پر سکریٹری ڈائرکٹر اردو اکیڈیمی پروفیسر ایس اے شکور، منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن بی شفیع اللہ آئی ایف ایس اور دونوں اداروں کے عہدیدار موجود تھے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر کو اردو دوست قرار دیا اور کہا کہ کے سی آر نہ صرف بہترین اردو داں ہیں بلکہ وہ اکثر و بیشتر اچھے اشعار پڑھتے ہیں۔ محمود علی نے کہا کہ ایسے اشعار جو وہ خود بھی نہیں بول سکتے، چیف منسٹر صاحب بآسانی ادا کرتے ہیں۔ اردو سے محبت اور اس کے فروغ سے دلچسپی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ اردو زبان کو ریاست بھر میں دوسری سرکاری زبان کا درجہ دیا گیا۔ انہوں نے اقلیتی بہبود میں 66 اردو آفیسرس کے تقرر کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ضلع کلکٹرس، اعلی عہدیداروں حتی کہ چیف منسٹر اور وزراء کو اردو اخبارات میں شائع ہونے والی خبروں سے واقف کرانے کے لیے اردو مترجمین کا تقرر کیا جارہا ہے۔ حکومت اقلیتوں کے مسائل جاننا چاہتی ہے اور اردو آفیسرس کی ذمہ داری ہوگی کہ وہ اردو اخبارات کی خبروں سے حکام کو واقف کریں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے سکریٹری ڈائرکٹر اردو اکیڈیمی پروفیسر ایس اے شکور کی ستائش کی اور کہا کہ اردو کے فروغ کی اسکیمات پر موثر انداز میں عمل کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آندھرائی حکمرانوں نے تلنگانہ کی تہذیب اور ثقافت کو نقصان پہنچایا تھا۔ کے سی آر نے گزشتہ تین برسوں میں زبان اور تہذیب کے تحفظ کے لیے اقدامات کیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر تمام طبقات کی یکساں ترقی کے حامی ہیں۔ ترقی اور فلاحی اقدامات میں تلنگانہ کا شمار ملک کی نمبر ون ریاست کی حیثیت سے ہوتا ہے جبکہ کے سی آر ملک میں نمبر ون چیف منسٹر ہیں۔ 204 اقامتی اسکولس کے قیام کو دنیا بھر میں ایک عظیم کارنامہ قرار دیتے ہوئے محمود علی نے کہا کہ چیف منسٹر نے اقلیتوں کی تعلیمی پسماندگی کے خاتمہ کے لیے اسکولس قائم کیے ہیں۔ ان اسکولوں میں غریب طلبہ کو کارپوریٹ طرز کی تعلیم مفت فراہم کی جارہی ہے۔ اسکولوں میں سہولتیں بھی معیاری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بہت جلد مستقل اساتذہ کا تقرر عمل میں آئے گا۔ محمود علی نے اقامتی اسکول سوسائٹی کے سکریٹری بی شفیع اللہ کی کاوشوں کو سراہا اور کہا کہ وہ اسکولوں کا معائنہ کرتے ہوئے سہولتوں اور معیار کا جائزہ لے رہے ہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے اردو اکیڈیمی کے کیلنڈر میں گولکنڈہ کی تاریخی تصاویر کی اشاعت کی ستائش کی۔

TOPPOPULARRECENT