Tuesday , October 16 2018
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر وعدہ کے مطابق تحفظات فراہم کرنے میں ناکام

چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر وعدہ کے مطابق تحفظات فراہم کرنے میں ناکام

سنت سیولال مہاراج کی جینتی تقریب ، ڈی رویندر نائیک ، سید عزیز پاشاہ کا خطاب
حیدرآباد۔15فبروری(سیاست نیوز) اقلیتوں اور قبائیلوں کو بالترتیب بارہ اور دس فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کرتے ہوئے کے سی آر نے اقتدار کو حاصل کرلیامگر چار سال کاعرصہ گذر جانے کے باوجود اس پر عمل ندارد ہے۔ البتہ چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو نے تحفظات فراہم کرنے کے بجائے قبائیلی طبقات کو ایک دوسرے کا دست گریبان کرتے ہوئے اپنے وعدوں سے لوگوں کی توجہہ ہٹا رہے ہیں ۔ سابق مرکز وزیر قبائیلی بہبود مسٹر ڈی رویندر نائیک نے میڈیاسے بات کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہار کیا۔آج یہاں سنگارینی کالونی میں عظیم قبائیلی قائد سنت سیولال مہاراج کی 271ویں جینتی تقریب میںشرکت کے دوران مسٹر ٹی رویندر نائیک نے کہاکہ تلنگانہ میںقبائیلی طبقے کے گوند کویا او رلمباڑہ میںتحفظات کے متعلق جھگڑا پیدا کرنے کی ذمہ داری حکومت پر عائد ہوتی ہے اور اس کے پس پردہ چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو کا سازشی ذہن کارفرما ہے۔ 2011کی مردم شماری کے مطابق قبائیلوں کا 10فیصد تحفظات پر جمہوری حق ہے اور اپنے انتخابی ریالیوں میں کے سی آر نے ایک طرف قبائیلوں کو دس فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیاتو دوسری طرف مسلمانو ں کو بارہ فیصد تحفظات فراہم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے دونوں طبقات کے ووٹ حاصل کئے اور اقتدار پر فائز ہونے کے بعد اپنے وعدوں کو فراموش کردیا۔انہوں نے کہاکہ لمباڑہ تانڈوں کو گرام پنچایت کا درجہ فراہم کرنے کا بھی حکومت نے وعدہ کیاتھا ۔2006کے فارسٹ رائٹس ایکٹ کے تحت قبائیلوں کے زیر قبضہ علاقے پر انہیںپٹہ جات کی اجرائی عمل میںلانا چاہئے تھا مگر قدرتی وسائل سے مالا مال ان علاقوں سے قبائیلوں کو کھدیڑ کر نکالا جارہا ہے اور خالی اراضی کارپوریٹ اداروں کو فروخت کی جارہی ہے۔ مسٹر نائیک نے کہاکہ اگر مخالفت کرتے ہیں تو قبائیلوں کو مائوسٹ اور مسلمانو ں کو دہشت گرد قراردیتے ہوئے جیلوں ٹھونسا کاکام کیاجارہا ہے یا پھر انکاونٹر کے نام پر انہیں قتل کیاجارہا ہے۔سابق رکن پارلیمنٹ راجیہ سبھا سیدعزیز پاشاہ نے کہاکہ بابائے قوم مہاتما گاندھی نے شدید طور پر پسماندگی کاشکار طبقات کو گریجن قرار دیا تھا۔جن قدرتی وسائل پر قبائیلو ں کا حق ہے ان کو حکومت سرمایہ داروں کے حوالے کررہی ہے ۔ جھوٹے وعدے اور کھوکھلے دعوے مرکزی اور ریاستی حکومتوں کی عادت بن گئی ہے۔ سیدعزیز پاشاہ نے کہاکہ انتخابات سے قبل جووعدے کئے تھے اس میںدس فیصد پر بھی عمل آواری ندارد ہے۔ حکومت بالخصوص چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو پر الزام عائد کیاکہ آئی پی سی 506اور 507میںترمیم کرتے ہوئے شہریوں کے حقوق سلب کرنے کی سازشیں کی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ احتجاج کے مرکز اندرا پارک دھرنا چوک کو منتقل کردیاگیا۔ مسٹر سوریہ نائیک ٹی پی سی سی قائد ‘ شنکر نائیک کے علاوہ دیگر بھی اس موقع پر موجودتھے۔

TOPPOPULARRECENT