Wednesday , October 17 2018
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر پر عوام کے ارمانوں کا خون کرنے کا الزام

چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر پر عوام کے ارمانوں کا خون کرنے کا الزام

کانگریس کے ارکان اسمبلی کی رکنیت بحالی پر اسپیکر اسمبلی سے نمائندگی کا فیصلہ ، اتم کمار ریڈی
حیدرآباد ۔ 8 ۔ جون : ( سیاست نیوز ) : صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی نے عوام کے ارمانوں کا خون کردینے کا چیف منسٹر کے سی آر پر الزام عائد کیا ۔ 11 جون کو جانا ریڈی کی قیادت میں اسپیکر اسمبلی سے ملاقات کرتے ہوئے کانگریس کے دو ارکان اسمبلی کی رکنیت بحال کرنے کی نمائندگی کرنے کا اعلان کیا ۔ عدالت کے فیصلے کا احترام نہ کرنے کی صورت میں تحقیر عدالت کی نوٹس دائر کرنے 24 گھنٹوں کی بھوک ہڑتال کرنے اور ضرورت پڑی تو صدر جمہوریہ سے بھی نمائندگی کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ۔ ساتھ ہی کھمم اور عالم پور میں بڑے جلسہ عام بھی منعقد کئے جائیں گے ۔ شہر میں دستیاب کانگریس کے ارکان اسمبلی ارکان قانون ساز کونسل کا آج قائد اپوزیشن کے جانا ریڈی کی قیام گاہ پر اجلاس طلب کیا گیا جس میں ہائی کورٹ کی ہدایت کے باوجود کانگریس کے ارکان اسمبلی کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی اور سمپت کمار کی رکنیت بحال نہ کرنے کا جائزہ لینے کے بعد ریاست کی تازہ سیاسی صورتحال پر غور کیا گیا ۔ بعد ازاں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اتم کمار ریڈی نے کہا کہ گورنر کے خطبہ میں جھوٹ کا سہارا لینے پر کانگریس کے ارکان اسمبلی نے احتجاج کیا لیکن صدر نشین قانون ساز کونسل سوامی گوڑ نے حملہ کرنے کے الزام میں کانگریس کے دو ارکان اسمبلی کی رکنیت منسوخ کردی گئی ۔ ہائی کورٹ کے سنگل بنچ کے فیصلے کے بعد بھی اسپیکر اسمبلی اور حکومت نے رکنیت بحال نہیں کی ۔ ڈیویژن بنچ نے بھی سنگل بنچ کے فیصلے کی تائید کی ۔ باوجود حکومت نے کوئی کارروائی نہیں کی ۔ کانگریس کے ارکان اسمبلی ارکان قانون ساز کونسل 11 جون کو اسپیکر اسمبلی مدھو سدن چاری سے ملاقات کرتے ہوئے ہائی کورٹ کے فیصلے کے تناظر میں کانگریس کے دو ارکان اسمبلی کی رکنیت بحال کرنے کی پھر ایک بار نمائندگی کریں گے ۔ چیف سکریٹری کو بھی ایک یادداشت پیش کی جائے گی ۔اس پر بھی کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا تو تحقیر عدالت کی نوٹس دائر کی جائے گی ۔ کھمم اور عالم پور میں بڑے جلسوں کا انعقاد کیا جائے گا ۔ 24 گھنٹوں کی بھوک ہڑتال کی جائے گی اور صدر جمہوریہ کو بھی یادداشت پیش کرتے ہوئے جمہوریت اور دستور کا تحفظ کرنے کا مطالبہ کیا جائے گا ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے کہا کہ تلنگانہ عوام کے جذبات کا احترام کرتے ہوئے سونیا گاندھی نے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دی ہے ۔ تاہم 4 سالہ دور حکومت میں چیف منسٹر کے سی آر نے عوام کے ارمانوں کا خون کردیا ۔ سماج کا کوئی بھی طبقہ حکومت کی کارکردگی سے مطمئن نہیں ہے ۔ چیف منسٹر کا رویہ غیر جمہوری ہے ۔ کورٹ کے فیصلے کا احترام نہ کرنے والے کے سی آر کو چیف منسٹر کے عہدے پر برقرار رہنے کا حق نہیں ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT