Monday , December 18 2017
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کا مسلم نواز ہونے کا ثبوت

چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کا مسلم نواز ہونے کا ثبوت

مدرسہ مدینتہ العلوم میں مولانا محمد یوسف زاہد کو تہنیت ، رکن اسمبلی دیاکر راؤ کا خطاب
حیدرآباد ۔ 19 ۔ اپریل : ( راست ) : مدرسہ مدینتہ العلوم کی دعوت پر بحیثیت مہمان خصوصی مولانا محمد یوسف زاہد نے شرکت کی ۔ جناب دیاکر راؤ ایم ایل اے نے اپنی اور مسلمانوں کی جانب سے چیرمین کی گلپوشی اور شال پوشی کی ۔ نیز دوران خطاب انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے سی آر نے مولانا کو جنرل زمرہ میں چیرمین شپ دے کر اپنے مسلم نواز ہونے کا ثبوت دیا ۔ اور انہوں نے یہ بھی کہا کہ آج تک ہندوستان کی تاریخ میں جتنے اہم عہدے کے سی آر نے دئیے کسی اور نے نہیں دیا ۔ یہاں تک کہ ایک ڈپٹی سی ایم بھی مسلمانوں کو دیا گیا ۔ بی جے پی اور فرقہ پرست طاقتوں کے ہزار مخالفتوں کے باوجود مسلمانوں کے لیے 12 فیصد تحفظات کا بل اسمبلی اور قانون ساز کونسل میں پیش کیا ۔ اوردیاکر راؤ یہ بھی کہا کہ سی ایم ہمارے مولانا پر بھر پور اعتماد کرتے ہیں ۔ مولانا لیاقت علی شیخ الحدیث اعظم گڑھ یو پی نے بچوں کا قرآن مجید تکمیل کروایا اور ان کی دستار بندی کی گئی ۔ حضرت شیخ الحدیث نے مسلمانوں کو یہ پیغام دیا کہ وہ قرآن کریم سے اپنے تعلق کو مضبوط کریں ۔ مولانا محمد یوسف زاہد نے اپنے خطاب میں کہا کہ مدرسہ مدینتہ العلوم اس علاقہ کے مسلمانوں کی ضرورت کو بحسن خوبی پورا کررہا ہے ۔ لہذا وہ اس ادارہ سے اپنے تعلق کو مضبوط کریں اور اس بات پر بھی زور دیا کہ مسلمان ہندوستان کے موجودہ ماحول کو مد نظر رکھتے ہوئے ہر مسلمان اپنی ذمہ داری کو محسوس کریں ۔ برادران وطن سے اپنے تعلق کو بڑھائیں اور دنیا میں جہاں بھی رہیں وہ اپنی افادیت کو ثابت کریں ۔ چیرمین کھادی بورڈ اور ویلیج انڈسٹریز کے اسکیمات پر بھی روشنی ڈالی اور حکومت تلنگانہ کے کارناموں کو اجاگر کیا اور کہا کہ کے سی آر نے 12 فیصد ریزرویشن اقلیتوں کو دے کر ان کے حقوق کی بازیابی کی طرف حوصلہ مندانہ قدم اٹھایا ہے ۔ جناب عبدالعلیم صدر مدرسہ کے کلمات تشکر پر جلسہ کا اختتام عمل میں آیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT