Saturday , December 15 2018

چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ کی توہم پرستی پر اظہار حیرت

مستقبل میں تاریخی چارمینار کو بھی خطرہ ، کانگریس رکن راجیہ سبھا وی ہنمنت راؤ کی تنقید

مستقبل میں تاریخی چارمینار کو بھی خطرہ ، کانگریس رکن راجیہ سبھا وی ہنمنت راؤ کی تنقید
حیدرآباد ۔ 5 ۔ فروری : ( سیاست نیوز ) : سکریٹری اے آئی سی سی و رکن راجیہ سبھا مسٹر وی ہنمنت راؤ نے چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی توہم پرستی پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مستقبل میں تاریخی چارمینار کو بھی خطرہ ہوسکتا ہے ۔ دہلی سے بی جے پی اور مودی کے زوال کا آغاز ہوگا ۔ آج اسمبلی کے احاطے میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے مسٹر وی ہنمنت راؤ نے کہا کہ واستو کے نام چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ بچکانی حرکت کررہے ہیں اور اس پر عوام کے کروڑہا روپئے ضائع کررہے ہیں ۔ ابھی تک سکریٹریٹ میں داخل ہونے کے لیے چار راستے تبدیل کئے گئے ہیں چیف منسٹر کی توہم پرستی کو دیکھ کر چارمینار کا مستقبل بھی خطرے میں پڑ گیا ہے ۔ کل مسٹر کے چندر شیکھر راؤ واستو کے مطابق چارمینار تعمیر نہ کرنے کا دعویٰ کرسکتے ہیں اگر عوام سے کئے گئے وعدوں پر توہم پرستی کو ترجیح دی گئی تو عوام ٹی آر ایس حکومت کے خلاف بغاوت کردیں گے اور حکومت کے خلاف بہت بڑا عوامی احتجاج شروع ہوجائے گا ۔ انہیں یقین ہے جس طرح چیف منسٹر اسکالر شپس اور فیس ری ایمبرسمنٹ سے متعلق فاسٹ اسکیم سے دستبرداری اختیار کی اس طرح سکریٹریٹ اور چیسٹ ہاسپٹل کو منتقل کرنے کے فیصلے سے بھی دستبرداری اختیار کریں گے ۔ مسٹر وی ہنمنت راؤ نے کہا کہ دہلی کے انتخابات سے بی جے پی اور نریندر مودی کے زوال کا آغاز ہوجائے گا ۔ کانگریس کے مظاہرہ کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ حکومت سازی میں کانگریس کا کلیدی رول ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ تمام سروے مودی کے خلاف ہیں وزیر اعظم اپنی شکست قبول کرنے کے لیے تیار نہیں ہے ۔ مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو بی جے پی کی شکست کو وزیر اعظم کی کارکردگی کے لیے ریفرنڈم کے طور پر قبول کرنے کے لیے تیار نہیں ہے ۔ بی جے پی نے عام انتخابات کے دوران عوام سے جو وعدے کئے اس کو پورا کرنے میں ناکام ہوگئے ۔ دہلی میں عوام بی جے پی کو سبق سکھانے کا فیصلہ کرچکے ہیں ۔ اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لیے وزیر اعظم سوچھ بھارت کے علاوہ دوسرے تشہیری کاموں کو اہمیت دے رہے ہیں ۔ مرکز میں بی جے پی حکومت قائم ہونے کے 100 دن میں بیرونی ملکوں سے کالا دھن واپس لانے اور ہر شہری کو 15 لاکھ روپئے کا مالک بنانے کا وعدہ کیا گیا مگر نہ کالا دھن آیا اور نہ ہی عوام کے اکاونٹ میں پیسے ۔ مگر وزیر اعظم نریندر مودی 10 لاکھ سوٹ پہن رہے ہیں اور صرف بی جے پی کے اچھے دن آئے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT