Sunday , January 21 2018
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر ریاست تلنگانہ کے لیے کندن باغ میں سرکاری رہائشی کوارٹرس

چیف منسٹر ریاست تلنگانہ کے لیے کندن باغ میں سرکاری رہائشی کوارٹرس

آئی پی ایس عہدیداروں کو کوارٹرس خالی کرنے کی نوٹس ، چندرا بابو نائیڈو کی خواہش زیر التواء

آئی پی ایس عہدیداروں کو کوارٹرس خالی کرنے کی نوٹس ، چندرا بابو نائیڈو کی خواہش زیر التواء

حیدرآباد ۔ 22 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : ریاستی حکومت نے نامزد چیف منسٹر ریاست تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کو کیمپ آفس کے لیے کندن باغ میں واقع سرکاری رہائشی کوارٹرس نمبر 3 اور 4 کا انتخاب کیا ہے ۔ فی الوقت ان کوارٹرس میں آئی پی ایس عہدیدار ، انٹلی جنس چیف مسٹر مہیندر ریڈی اور سینئیر آئی اے ایس عہدیدار و ڈائرکٹر ڈاکٹر ایم چناریڈی انسٹی ٹیوٹ برائے فروغ انسانی وسائل مسٹر اے کے پریڈا مقیم ہیں لیکن آج اس سلسلہ میں جی اوز جاری کرتے ہوئے ان دونوں عہدیداروں کو فی الفور اپنے رہائشی کوارٹرس کا تخلیہ کردینے کا حکم دیا گیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ بیگم پیٹ پر واقع موجودہ چیف منسٹرس کیمپ آفس میں داخل ہونے سے نامزد چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے صاف طور پر انکار کردیا ہے کیوں کہ یہ کیمپ آفس کسی بھی چیف منسٹر کے لیے موافق نہیں آیا کیوں کہ یہ کیمپ آفس عمارت واستو کے لحاظ سے موزوں نہیں ہے ۔ جس کی وجہ سے ہی سمجھا جاتا ہے کہ سابق چیف منسٹر ڈاکٹر وائی ایس راج شیکھر ریڈی کی اچانک ہیلی کاپٹر حادثہ میں ہلاکت واقع ہوئی بعد ازاں سابق چیف منسٹر مسٹر کے روشیا کے لیے بھی موجودہ کیمپ آفس موافق نہیں آیا جس کی وجہ سے وہ چیف منسٹر عہدے سے ہٹا دئیے گئے ۔ بعد ازاں مسٹر ین کرن کمار ریڈی کے لیے بھی موجودہ کیمپ آفس موافق نہیں آیا ۔

جس کے نتیجہ میں وہ بھی اقتدار سے محروم ہوگئے ۔ بتایا جاتا ہے کہ ان تمام حالات کو پیش نظر رکھتے ہوئے مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے موجودہ کیمپ آفس میں داخل ہونے سے صاف طور پر انکار کرتے ہوئے کوئی موزوں عمارت کا انتخاب کرنے کی ہدایت دی تھی جس کی روشنی میں متعلقہ اعلیٰ عہدیداروں نے نامزد چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے لیے سرکاری رہائشی کوارٹرس نمبر 3 اور 4 کا انتخاب کر کے جی او جاری کردیا ۔ ٹی آر ایس کے باوثوق ذرائع کے مطابق بتایا جاتا ہے کہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ اپنی ذاتی قیام گاہ میں ہی مقیم رہنے کو ترجیح دیں گے اور کبھی اتفاقی طور پر ضروری تصور کریں تو وہ مذکورہ کوارٹرس میں اپنی سرکاری سرگرمیوں کو جاری رکھنے کا ارادہ رکھتے ہیں تاہم بتایا جاتا ہے کہ واستو کے نام پر سرکاری عمارتوں کی تزئین نو وغیرہ سے سرکاری خزانہ پر کافی بھاری مالی بوجھ عائد ہورہا ہے ۔ اسی دوران بتایا جاتا ہے کہ نامزد چیف منسٹر آندھرا پردیش ریاست مسٹر این چندرا بابو نائیڈو کے لیے ریاستی سکریٹریٹ میں تیار کئے جانے والے چیمبر میں آنے سے صاف انکار کردیا اور بتایا جاتا ہے کہ مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے اپنے سرکاری چیمبر کے لیے ڈاکٹر ایم چناریڈی انسٹی ٹیوٹ برائے فروغ انسانی وسائل کو الاٹ کرنے کی خواہش ظاہر کی ہے ۔ تاہم بتایا جاتا ہے کہ ابھی اس سلسلہ میں کوئی قطعی فیصلہ نہیں کیا گیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT