Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کا 16 جولائی کو دورہ دہلی

چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کا 16 جولائی کو دورہ دہلی

بین ریاستی کونسل اجلاس میں شرکت و ریاست کا ایجنڈہ بھی تیار
حیدرآباد۔/12جولائی، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ 16جولائی کو نئی دہلی کا دورہ کریں گے جہاں وہ وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں منعقد ہونے والے بین ریاستی کونسل کے اجلاس میں شرکت کریں گے۔ وزیراعظم کے دفتر سے اس اجلاس کے سلسلہ میں ایجنڈہ کی تفصیلات چیف منسٹر کے دفتر کو روانہ کی گئی ہیں۔ اجلاس کے ایجنڈہ میں 4 اُمور کو شامل کیا گیا ہے اور چیف سکریٹری ڈاکٹر راجیو شرما نے اس بارے میں مختلف محکمہ جات کے پرنسپل سکریٹریز اور چیف سکریٹریز کے ساتھ اجلاس منعقد کیا۔ تلنگانہ حکومت کی جانب سے چیف منسٹر ان اُمور پر موقف پیش کریں گے۔ بین ریاستی کونسل کے اجلاس میں جو مسائل زیر غور آسکتے ہیں ان میں محکمہ جات کی اساس پر مرکز اور ریاست کے مسائل، آدھار کارڈز کی تقسیم میں ریاستوں کی پیشرفت، تعلیمی نظام میں اصلاحات اور ریاستوں کی داخلی سلامتی جیسے اُمور شامل ہیں۔ چیف سکریٹری نے ان مسائل پر چیف منسٹر کو بریفنگ دی ہے جس کے بعد تلنگانہ حکومت کی جانب سے مرکز کو رپورٹ روانہ کردی گئی۔ واضح رہے کہ 10 سال کے عرصے کے بعد بین ریاستی کونسل کا اجلاس منعقد ہورہا ہے جس کے لئے ابتداء میں حیدرآباد ہاوز کا انتخاب کیا گیا تھا تاہم اب یہ راشٹر پتی بھون میں منعقد ہوگا۔ اس اجلاس میں تمام ریاستوں کے چیف منسٹرس شرکت کریں گے۔ بتایا جاتا ہے کہ اس اجلاس کے مباحث کی بنیاد پر وزارت داخلہ کی جانب سے ایجنڈہ تیار کیا جائے گا۔ پہلے ایجنڈہ میں صرف دو اُمور کو ہی شامل کیا گیا ہے جبکہ دوسرا ایجنڈہ اجلاس کے آغاز پر پیش ہوگا۔ مرکز اور ریاستوں کے تعلقات کے مسئلہ پر سابق چیف جسٹس کی جانب سے پیش کی گئی رپورٹ اور 273 سفارشات پر مباحث ہوں گے۔ ملک بھر میں آدھار کارڈ کی تیاری میں 18سال سے زائد عمر والے افراد میں 96 فیصد اور 18سال سے کم عمر والوں میں بہت کم فیصد میں آدھار کارڈز جاری کئے گئے۔ چیف منسٹر کے ہمراہ چیف سکریٹری ڈاکٹر راجیو شرما اجلاس میں شرکت کریں گے۔ وزارت داخلہ نے وضاحت کردی ہے کہ چیف منسٹرکے ساتھ صرف چیف سکریٹری کو شرکت کی اجازت رہے گی۔ ہر ریاست سے صرف دو نمائندے شرکت کریں گے۔ بین ریاستی کونسل کے صدرنشین کی حیثیت سے وزیر اعظم اور کونسل میں نامزد کئے گئے 6مرکزی وزراء اور 11ارکان شریک ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT