Monday , August 20 2018
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر کا خطرہ کی پرواہ کئے بغیر عوامی بھلائی و ترقی پر یقین

چیف منسٹر کا خطرہ کی پرواہ کئے بغیر عوامی بھلائی و ترقی پر یقین

ماوسٹس متاثرہ علاقوں میں کے سی آر آبپاشی پراجکٹ کا دورہ سیکوریٹی نوعیت سے کامیاب
حیدرآباد۔ 8 ڈسمبر (سیاست نیوز) آبپاشی پراجیکٹ کے معائنے کے لیے چیف منسٹر کے دو روزہ دورے کریم نگر، بھوپال پلی اور پیدا پلی کو سکیوریٹی نوعیت سے کامیاب دورہ قرار دیا جارہا ہے۔ دورے کے اختتام کے بعد پولیس اور سکیوریٹی اداروں نے اطمینان کی سانس لی۔ چیف منسٹر نے کالیشورم پراجیکٹ کے سلسلہ میں جن علاقوں کا دورہ کیا ان میں زیادہ تر مائوسٹس سے متاثرہ شمار کیے جاتے ہیں۔ متحدہ آندھراپردیش میں ان علاقوں میں مائوسٹوں کی سرگرمیاں عروج پر تھیں۔ چیف منسٹر کے دورے سے ایک دن قبل 20 کیلومیٹر کی دوری پر مہاراشٹرا کے گوڑی چلی ضلع میں مائوسٹوں کا اجلاس جاری تھا اور پولیس کے ساتھ انکائونٹر میں 7 مائوسٹ ہلاک ہوگئے۔ اس انکائونٹر کے بعد پولیس نے چیف منسٹر کے دورہ کے مقامات پر انتظامات کو مزید سخت کردیا اور چوکسی میں اضافہ کردیا گیا۔ یہ علاقہ بھوپال پلی ضلع کے میڈی گڈا پراجیکٹ سے صرف 20 کیلومیٹر کی دوری پر ہے۔ انکائونٹر کے بعد مہاراشٹرا کے علاقوں سے تلنگانہ کی سرحد میں مائوسٹوں کے داخلے کے امکانات کو دیکھتے ہوئے سخت چوکسی اختیار کی گئی تھی۔ پراجیکٹ کے مقامات کو پولیس نے مکمل طور پر اپنے کنٹرول میں لے لیا تھا۔ سرحدی علاقوں کے علاوہ سڑک کے تمام راستوں اور مواضعات میں بھی نگرانی میں اضافہ کیا گیا۔ عوام سے خواہش کی گئی تھی کہ مواضعات میں کسی اجنبی کے دکھائی دینے پر پولیس کو اطلاع دیں۔ ٹی آر ایس قائدین کا کہنا ہے کہ سابق میں کسی بھی چیف منسٹر نے ان علاقوں کا دورہ کرنے کی ہمت نہیں جٹائی۔ دو سال قبل کے سی آر نے ورنگل میں مائوسٹوں سے متاثرہ علاقوں کا 5 گھنٹوں تک دورہ کرتے ہوئے آبپاشی پراجیکٹس کے کاموں کا جائزہ لیا تھا۔ ٹی آر ایس قائدین کا کہنا ہے کہ کے سی آر اپنی دھن کے پکے ہیں اور وہ کسی بھی خطرے کی پرواہ کیے بغیر عوام کی بھلائی اور ریاست کی ترقی کے مقصد سے بے خوف و خطر دورہ کرنے پر یقین رکھتے ہیں۔ انہوں نے عوام سے ملاقات کے لیے کئی ترقیاتی کاموں کی افتتاحی تقاریب میں حصہ لیا تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ بہت جلد چیف منسٹر ریاست کے دیگر اضلاع کے دورے کا منصوبہ تیار کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT