Wednesday , September 19 2018
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر کو حکومت تحلیل کرنے کا مشورہ : لگڑا پاٹی راجگوپال

چیف منسٹر کو حکومت تحلیل کرنے کا مشورہ : لگڑا پاٹی راجگوپال

حیدرآباد ۔ 8 فبروری (سیاست نیوز) کانگریس کے رکن پارلیمنٹ لگڑا پاٹی نے کہا کہ چیف منسٹر کرن کمار ریڈی کابینہ میں تلنگانہ بل کو منظور کرنے پر ہی استعفیٰ دینے کیلئے تیار تھے۔ تاہم انہوں نے چیف منسٹر کو 21 فبروری تک انتظار کرنے کا مشورہ دے چکے ہیں۔ آج میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے لگڑا پاٹی راجگوپال نے کہا کہ علحدگی پسند قائدین کو چیف منسٹر ب

حیدرآباد ۔ 8 فبروری (سیاست نیوز) کانگریس کے رکن پارلیمنٹ لگڑا پاٹی نے کہا کہ چیف منسٹر کرن کمار ریڈی کابینہ میں تلنگانہ بل کو منظور کرنے پر ہی استعفیٰ دینے کیلئے تیار تھے۔ تاہم انہوں نے چیف منسٹر کو 21 فبروری تک انتظار کرنے کا مشورہ دے چکے ہیں۔ آج میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے لگڑا پاٹی راجگوپال نے کہا کہ علحدگی پسند قائدین کو چیف منسٹر بننے سے روکنے کیلئے انہوں نے چیف منسٹر کرن کمار ریڈی کو فوری اثر کے ساتھ حکومت تحلیل کرنے کا مشورہ دے چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکز کے فیصلے سے چیف منسٹر بہت زیادہ غمزدہ ہیں۔ اگر ان کی جانب سے پارٹی تشکیل دی گئی تو بھی اس پارٹی میں شامل ہوجائیں گے۔ کانگریس کے رکن پارلیمنٹ نے چیف منسٹر کو مشورہ دیا کہ وہ ان کی تائید کرنے اور ساتھ دینے والوں کے سیاسی مستقبل کے بارے میں بھی غور کریں۔ ریاست کو متحد رکھنے کے معاملے میں ہم پوری طرح چیف منسٹر کے ساتھ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کل دہلی میں کانگریس کور کمیٹی کے اجلاس میں چیف منسٹر کو برطرف کرنے کا جائزہ لیا لیکن اس اقدام سے چیف منسٹر ہیرو بن جانے کا خوف ظاہر کرتے ہوئے ان کے خلاف کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔ لگڑا پاٹی راجگوپال نے کہا کہ مرکزی کابینہ میں سیما آندھرا کے وزراء کی توہین ہوئی ہے۔ انہوں نے حکومت کو سبق سکھانے کا مرکزی وزراء کو مشورہ دیا۔
اقلیت میں رہنے والی یو پی اے حکومت پارلیمنٹ میں تلنگانہ کا بل پیش کرنے کے موقف میں نہ ہونے کا دعویٰ کیا۔ علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کو روکنے کیلئیکافی ہتھیار موجود ہونے کا دعویٰ کیا۔ اکثریتی رائے کو نظرانداز کرکے ریاست کو تقسیم کرنے کی کوشش کرنے کا چیف منسٹر پر الزام عائد کیا۔

TOPPOPULARRECENT