Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / چیف منسٹر گجرات آنندی بین پٹیل کا مستعفی ہوجانے کا فیصلہ

چیف منسٹر گجرات آنندی بین پٹیل کا مستعفی ہوجانے کا فیصلہ

استعفی قبول کرلینے ’ فیس بک ‘ پر پارٹی قیادت سے اپیل ۔ پارلیمانی بورڈ میں جانشین کا فیصلہ ہوگا ۔ امیت شاہ کا بیان

احمد آباد / نئی دہلی ۔ یکم اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) اسمبلی انتخابات سے قبل ایک اچانک اقدام میںچیف منسٹر گجرات آنندی بین پٹیل نے آج استعفی پیش کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے اور کہا کہ اب نئی قیادت کے آگے آنے کا وقت آگیا ہے کیونکہ وہ بہت جلد 75 سال کی ہوجائیں گی ۔ آنندی بین پٹیل کو کئی چیلنجس کا سامنا تھا ۔ پٹیل دو سال سے کچھ زیادہ سے اس عہدہ پر فائز رہیں اور اس دوران گجرات میںمودی کے بعد کے دور میں بی جے پی کو کوئی چیلنجس کا سامنا کرنا پڑا اور اسے مجالس مقامی انتخابات میں ہزیمت بھی ہوئی تھی ۔ اس کے علاوہ یہاں او بی سی کوٹہ کیلئے پٹیل برادری نے زبردست احتجاج منظم کیا تھا اور اب وہاں مردہ گائے کی چمڑی نکالنے والے دلتوں کو غیر انسانی مارپیٹ کے مسئلہ پر بھی بی جے پی کیلئے صورتحال مشکل ہوگئی ہے ۔ آنندی بین پٹیل نے فیس بک کا استعمال کرتے ہوئے پارٹی قیادت سے کہا کہ وہ انہیں اس ذمہ داری سے سبکدوش کردے ۔ حالانکہ کچھ وقت سے یہ قیاس آرائیاں ہو رہی تھیں کہ اب آنندی بین پٹیل کا چل چلاؤ کا وقت آگیا ہے ۔ ریاست میں 2017 کے دوسرے نصف میں اسمبلی انتخابات ہوسکتے ہیں۔ بی جے پی کے صدر امیت شاہ نے کہا کہ پارٹی کے پارلیمانی بورڈ میں آنندی بین پٹیل کے متبادل کا فیصلہ کیا جائیگا ۔ آنندی بین 21 نومبر کو 75 سال کی ہوجائیں گی ۔ انہوں نے آج استعفی کی پیشکش کا مکتوب پارٹی صدر کو بھی روانہ کردیا ۔ وہ گجرات کی پہلی خاتون چیف منسٹر تھیں۔ امیت شاہ نے دہلی میں بتایا کہ پٹیل نے پارٹی سے انہیں ان کی ذمہ داری سے سبکدوش کرنے کی خواہش کی ہے ۔ وہ اس مکتوب کو پارلیمانی بورڈ میں پیش کرینگے اور وہیں کوئی فیصلہ کیا جائیگا ۔ آنندی بین پٹیل نے اپنے فیس بک پیج پر تحریر کیا ہے کہ گذشتہ کچھ وقت سے یہ روایت چل رہی ہے کہ جو کوئی 75 سال عمر کو پہونچ جاتا ہے وہ از خود عہدوں سے سبکدوش ہوجاتا ہے ۔ وہ بھی ماہ نومبر میں اس عمر کو پہونچنے والی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دو ماہ قبل انہوں نے پارٹی سے خواہش کی تھی کہ انہیں اس ذمہ داری سے سبکدوش کردیا جائے اور آج اس مکتوب کے ذریعہ بھی وہ پارٹی قیادت سے یہی درخواست کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ دو ماہ قبل از وقت سبکدوشی چاہتی ہیں کیونکہ نئے چیف منسٹر کو کچھ وقت درکار ہوگا تاکہ وہ کام کاج کو سنبھال سکیں۔ انہوں نے کہا کہ 75 سال عمر کا اصول اچھی بات ہے اور اس سے نوجوان قائدین کو آگے آنے کا موقع ملے گا ۔
اعلی قیادت کے دباؤ پر استعفی
انتخابات میں شکست کا اشارہ : کانگریس
اس دوران کانگریس نے ادعا کیا ہے کہ آنندی بین پٹیل نے پارٹی کی اعلی قیادت کے دباؤ میں استعفی پیش کیا ہے کیونکہ پارٹی ریاست میں مقبولیت کھوتی جا رہی ہے ۔ پارٹی نے کہا کہ یہ استعفی در اصل اسمبلی انتخابات میںبی جے پی کی شکست کا اشارہ ہے ۔ سینئر لیڈر شنکر سنہہ واگھیلا نے کہا کہ آنندی بین نے پارٹی اعلی قیادت کے دباؤ میں یہ پیشکش کی ہے جبکہ صدر کانگریس سونیا گاندھی کے سیاسی مشیر احمد پٹیل نے ٹوئیٹ کیا ہے کہ ان کا استعفی 2017 اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کی یقینی شکست کا اشارہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT