Friday , November 24 2017
Home / Top Stories / چیف منسٹر ہریانہ کی مظلوم و ملزمین کے افراد خاندان سے ملاقات

چیف منسٹر ہریانہ کی مظلوم و ملزمین کے افراد خاندان سے ملاقات

FARIDABAD, OCT 22 (UNI):- Members of Dalit community agitation against Haryana Cief Minister Manohar Lal Khattar, Central Minister K.P.Gurjar for visit Sunped village and meet to victim Jitender on Thursday. UNI PHOTO-97U

مہلوک بچوں کے والد کو 10لاکھ روپئے کا چیک حوالے،واقعہ کی سی بی آئی تحقیقات کا وعدہ
فرید آباد ۔/22اکٹوبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) چیف منسٹر ہریانہ منوہر لال کھتر نے آج مہلوک 2دلت بچوں کے خاندان سے ملاقات کی جنہیں 2یوم قبل اعلیٰ ذات کے افراد نے زندہ جلادیا تھا۔انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کو سیاسی یا ذات پات کا رنگ نہیں دینا چاہیئے اگرچیکہ پولیس نے اس واقعہ میں 7ملزمین کو گرفتار کرلیا ہے لیکن مزید 4ملزمین مفرور ہیں۔ چیف منسٹر نے کل دلتوں کے احتجاج کے پیش نظر سونپیڈ گاؤں کا دورہ ملتوی کردیا تھا۔ ملزمین کے رشتہ داروں اور راجپوتوں کے وفد سے بھی ملاقات کی جنہوں نے یہ شکایت کی ہے کہ بے گناہ 10افراد کو کیس میں پھنسایا جارہا ہے۔ اے سی پی رتبہ کے عہدیدار کی زیر قیادت پولیس ٹیم نے اس گاؤں کا دورہ کیا جہاں پر ایک دلت خاندان کے مکان کو نذرآتش کردیا گیا تھا۔ مقامی دیہاتیوں نے ٹیم کا گھیراؤ کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ پولیس اعلیٰ ذات کے افراد کے ساتھ ساز باز کرتے ہوئے ثبوتوں کو مٹانے کی کوشش میں ہے۔ تاہم سرکاری حکام نے الزامات کی تردید کی ہے۔ مہلوک بچوں کے والد جتیندر سے کانگریس لیڈر راہول گاندھی کی ملاقات کے ایک دن بعد چیف منسٹر نے آج 10لاکھ کا چیک متاثرہ خاندان کے حوالے کیا اور بتایا کہ مناسب طریقہ پر کیس کی تحقیقات کو یقینی بنایا جائے گا تاہم انہوں نے کہا کہ یہ انتہائی افسوسناک ہے کہ بعض جماعتیں اس واقعہ کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش میں ہیں جس سے باز آجانا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کی سی بی آئی تحقیقات پر بھی غور کیا جائیگا۔ اس واقعہ پر بی جے پی کے خلاف تنقیدیں شروع ہوگئی ہیں بالخصوص کانگریس نے مرکزی وزیر وی کے سنگھ کے اس متنازعہ ریمارک پر کہ اگر کوئی کتے پر پتھر پھینکتا ہے تو حکومت کیا کرسکتی ہے؟۔ بی جے پی کو مخالف دلت اور مخالف غریب قرار دیا ہے۔ بعد ازاں منوہر لال کھتر نے گاؤں کے مضافات پہنچ کر سرکیوٹ ہاوز میں ملزمین کے رشتہ داروں سے ملاقات کی اور گزشتہ سال جتیندر کے رشتہ داروں کے ہاتھوں قتل کردیئے گئے 3افراد کی بیواؤں سے ملاقات کی جنہیں دو خاندانوں میں پرانی خصومت کی بناء ماردیا گیا تھا۔ اس موقع پر راجپوتوں کے وفد سے بات کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ سی بی آئی تحقیقات کے بعد حقائق آشکار ہوجائیں گے اور مجرم کو ہرگز بخشا نہیں جائے گا تاہم بے گناہ افراد کا بھی تحفظ کیا جائے گا۔دریں اثناء پولیس کمشنر فرید آباد مسٹر سبھاش یادو نے بتایا کہ دو بچوں کی ہلاکت کے واقعہ میں مزید 3ملزمین کو گرفتار کرلیا گیا۔اسطرح 11 میں 7ملزمین کو حراست میں لیا گیا ہے اور دیگر افراد کو بہت جلد گرفتار کیا جائیگا۔ انہوں نے بتایا کہ گاؤں میں حالات پرسکون ہیں۔ تقریباً 500 پولیس اہلکاروں کو امن و امان کی برقراری کیلئے متعین کردیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT