Wednesday , September 19 2018
Home / کھیل کی خبریں / چینائی مسلسل جیت کیلئے کوشاں ، دہلی کے پاس ہارنے کیلئے کچھ نہیں

چینائی مسلسل جیت کیلئے کوشاں ، دہلی کے پاس ہارنے کیلئے کچھ نہیں

رائے پور ، 11 مئی (سیاست ڈاٹ کام) آئی پی ایل 8 کے پلے آف مرحلے میں اپنا مقام عملاً یقینی ہوجانے کے بعد چینائی سوپر کنگس یہی چاہیں گے کہ پوائنٹس ٹیبل نمبر ایک پوزیشن پر اپنی گرفت کو مضبوط رکھا جائے جب وہ اس دوڑ سے باہر دہلی ڈیرڈیولس کا کل یہاں ٹورنمنٹ کے لیگ میچ میں سامنا کریں گے۔ 12 مقابلوں میں آٹھ کامیابیوں اور چار ناکامیوں کے ساتھ دو مرتبہ کے چمپینس سی ایس کے ابتدائی درجہ بندی میں ٹاپ پوزیشن پر ہیں۔ اس کے برعکس ڈیرڈیولس اپنے 12 میچوں کے منجملہ آٹھ ہار جانے کے بعد نچلے مقام سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ درحقیقت، یہ ٹیم لگاتار چار مقابلے ہار چکی ہے جبکہ اس کی آخری جیت کئی روز قبل یکم مئی کو درج ہوئی تھی، اور وہ بھی نچلے مقام پر موجود کنگس الیون پنجاب کے خلاف۔ ڈی ڈی کی مہم ابھی تک بھیانک خواب کی مانند ہوئی ہے لیکن ایک پہلو جو شاید کل اُن کے کچھ کام آجائے وہ یہ ہے کہ اس ٹیم کے پاس پلے آف دوڑ سے ناک آؤٹ ہوجانے کے بعد ہارنے کیلئے کچھ نہیں رہ گیا ہے۔ مگر ایک دو معمولی کوتاہیوں کے سوا، سی ایس کے نے ابھی تک بہت ٹھیک ٹھیک کھیلا ہے اور جے پی ڈومینی کے کھلاڑیوں کیلئے ٹائٹل کیلئے پسندیدہ ٹیم کو ناکامی سے دوچار کرنا بہت کٹھن رہے گا۔ اس سیزن ایسا لگتا ہے ڈی ڈی کیلئے کچھ بھی اچھا نہیں ہوا جبکہ کئی کروڑ روپئے کے عوض حاصل شدہ یوراج سنگھ بیٹنگ میں اُن کے سب سے بڑے فلاپ اسٹار رہے ہیں۔ مڈل آرڈر میں اُن کے بے کیف مظاہرے نے ڈی ڈی کو کافی نقصان پہنچایا، ویسے ڈومینی اور کوئنٹن ڈی کاک بھی مایوس کن رہے ہیں۔ بولنگ کے محاذ پر اگرچہ ویٹرن پیس اسٹرائک بولر ظہیر خان نے انجری سے واپسی کے بعد سے معقول اعداد و شمار درج کرائے ہیں لیکن ڈی ڈی اٹیک میں ضروری کاٹ کا فقدان ہے۔ دوسری طرف سی ایس کے دندناتے گزر رہی ٹیم ہے مگر ایسا بھی نہیں کہ انھیں اپنی پریشانیوں پر غور کرنا ہی نہیں ہے۔ بعض خامیاں گزشتہ رات راجستھان رائلز کے خلاف آشکار ہوئیں؛ یہ اور بات ہے کہ ٹیم نے جیت درج کرانے میں کامیابی پائی۔ اُن کی فکرمندی کے پہلوؤں میں سے ایک جیسا کہ خود کوچ اسٹیفن فلیمنگ نے اعتراف کیا، اچھی شروعات کیلئے نیوزی لینڈ کے جارحانہ برینڈن مک کلم پر انحصار ہے۔ اس کیوی اوپنر کا فام تاحال منعقد مقابلوں میں کافی اہم رہے ہیں اور زیادہ تر موقعوں پر انھوں نے اچھا کھیلا ہے لیکن ڈوین اسمتھ کی بیاٹ ابتدائی کامیابی کے بعد خاموش ہوچلی ہے اور انھیں کل سے بہتر کوئی موقع نصیب نہیں ہوگا کہ پھر ایک بار اپنا فام پالیں۔ آشیش نہرا سی ایس کے بولنگ اٹیک کی غیرمعمولی استقلال کے ساتھ قیادت کرتے آئے ہیں اور انھیں اسپن جوڑی روینڈر جڈیجا اور آر اشوین سے اچھی مدد ملی ہے۔ ویسے اشوین سے کل رات کے میچ میں بولنگ نہیں کرائی گئی۔ یہ ٹیم کے فام میں اس قدر فرق دیکھنے میں آیا ہے کہ سی ایس کے کل صاف صاف فیورٹ رہیں گے، یہ اور بات ہے کہ ڈی ڈی کا ہار کیلئے کچھ نہ ہونے کا موقف شاید انھیں کھُل کر کھیلنے اور کوئی اَپ سٹ کردینے میں مدد دے ۔

TOPPOPULARRECENT